کابل میں خودکش دھماکہ‘ بھارتی سفارتخانے کے 4 اہلکاروں سمیت 19 ہلاک‘ 38 زخمی

27 فروری 2010
کابل میں خودکش دھماکہ‘ بھارتی سفارتخانے کے 4 اہلکاروں سمیت 19 ہلاک‘ 38 زخمی
کابل (اے ایف پی + مانیٹرنگ نیوز + ایجنسیاں) افغانستان کے دارالحکومت کابل میں خودکش بمبار نے گیسٹ ہا¶س اور شاپنگ مال کے قریب خود کو اڑا لیا۔ بھارتی سفارتخانے کے 4 اہلکاروں ‘ اطالوی باشندے اور 2 پولیس افسروں سمیت 19 افراد ہلاک اور38 زخمی ہو گئے۔ کرزئی نے حملے کی مذمت کی ہے جبکہ بھارتی سفارتخانے نے اپنے عملہ کے 4 ارکان کی ہلاکت کی تصدیق کر دی جبکہ 3 افرادلاپتہ ہیں‘مرنیوالا اطالوی وزیراعظم سلویو برسکونی کا سفارتی مشیر تھا طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی۔ افغان وزارت داخلہ کے ترجمان کے مطابق ایک خودکش حملہ آور نے کابل کے بڑے شاپنگ مال اور فائیو سٹار ہوٹل کے قریب خود کو دھماکے سے اڑا دیا جس کے نتیجے میں 15 افراد ہلاک 38 زخمی ہو گئے۔ بعدازاں زخمیوں میں سے 4 افراد مزید موت کے منہ میں چلے گئے۔ دھماکوں میں ایک گیسٹ ہاو¿س تباہ اور دوسرے کو شدید نقصان پہنچا۔ عینی شاہدین کے مطابق گذشتہ روز علی الصبح دو دھماکوں کے بعد آدھے گھنٹے تک فائرنگ کا سلسلہ جاری رہا۔ افغان پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ تین خودکش حملہ آوروں کو دھماکہ کرنے سے پہلے ہلاک کر دیا گیا۔ دوسری جانب طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کابل خودکش دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی اور کہا ہے کہ 5 افغان پولیس اہلکار اس حملے میں ہلاک ہو گئے جبکہ مرنے اور زخمی ہونے والے دوسرے افراد میں غیر ملکی بھی شامل ہیں۔ عینی شاہدین نے بتایا کہ شاپنگ سنٹر کی عمارت سے دھواں اٹھتا دیکھا گیا تاہم جس وقت یہ دھماکہ ہوا بہت کم لوگ موجود تھے۔ پولیس کے مطابق 9 بھارتی شہری مارے گئے‘ اقوام متحدہ‘ امریکی اور کینیڈین سفارتخانے نے مذمت کی ہے۔ تشدد کی تازہ کارروائی سے ایک روز قبل افغان حکومت نے اعلان کیا تھا کہ جنوبی صوبے ہلمند کے مرکزی شہر کرجاہ پر سرکاری پرچم لہرانے کے بعد علاقے میں حکومت کی عملداری قائم کر دی گئی ہے۔
کابل دھماکہ