افغانستان میں مستقل فوجی اڈوں کی تعمیر شروع‘ مسلم دنیا سے عسکریت پسندی کے خاتمہ کیلئے 25 سال تک جنگ لڑیں گے: امریکی جوائنٹ فورس کمانڈ

27 دسمبر 2008
واشنگٹن (آن لائن) امریکہ مسلم دنیا سے عسکریت پسندی کے خاتمے کے لئے آئندہ 25 سال تک جنگ لڑیگا‘ اس حکمت عملی کے تحت امریکہ افغانستان میں مستقل بنیادوں پر فوجی ڈھانچہ کی تعمیر کر رہا ہے جو اس بات کی تصدیق ہے کہ امریکہ طویل عرصے تک اس جنگ زدہ ملک میں قیام کرے گا۔ امریکہ کے جوائنٹ فورسز کمانڈ کی طرف سے جاری ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ نے مسلم دنیا سے عسکریت پسندی کے خاتمے کے لئے 25 سال تک جنگ لڑنے کا عزم کر رکھا ہے اور اس عزم کی تکمیل کے لئے وہ افغانستان میں مستقل بنیادوں پر فوجی ڈھانچہ جات کی تعمیر کر رہا ہے۔ اس ہفتہ کے اوائل میں امریکہ کی انجینئرنگ کور سے افغانستان میں مستقل فوجی اڈوں کی تعمیر کے لئے ٹینڈر دیا گیا ہے۔ ان تین مستقل اڈوں میں سے ایک قندھار میں تعمیر ہوگاجس پر 500 ملین ڈالر لاگت آئے گی جبکہ دیگر تین مختلف علاقوں میں فوجیوں کی رہائش گاہیں تعمیر کی جائیںگی جن پر ہرایک پر 100 ملین ڈالر خرچ ہوںگے۔ گزشتہ ہفتے وزیر دفاع رابرٹ گیٹس نے افغان حکومت کو طویل عرصے تک افغانستان میں قیام کی یقین دہانی کرائی تھی۔ وائس آف امریکہ کے مطابق جوائنٹ فورس کمانڈ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ امریکہ نے 25 سال تک عسکریت پسندی کے خلاف جنگ کے لئے تیاری کر لی ہے۔ واشنگٹن پوسٹ کے مطابق آئندہ سالوں میں پانچ ہزار اضافی امریکی فوجیوں کو ٹھہرانے کے لئے قندھار میں بھی ایک بڑی فوجی کالونی تعمیر کی جائے گی۔