بھارتی رویہ جنوبی ایشیا کے عوام‘ عالمی امن کیلئے سخت خطرہ ہے: فرانس

27 دسمبر 2008
بھارتی رویہ جنوبی ایشیا کے عوام‘ عالمی امن کیلئے سخت خطرہ ہے: فرانس
پیرس (آن لائن + ثناء نیوز) فرانس نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت ممبئی واقعات کی مکمل تحقیقات کے لئے ایک دوسرے سے بھرپور تعاون اور مذاکرات کا سلسلہ شروع کریں۔ یہ بات پیرس میں فرانسیسی سیکرٹری خارجہ گیرارڈ ایرپا نے پاکستان فرانس سالانہ مشاورتی اجلاس کے دوران کہی۔ پاکستانی سیکرٹری خارجہ سلمان بشیر بھی اس موقع پر موجود تھے۔ فرانسیسی سیکرٹری خارجہ نے کہا کہ بھارت پاکستان کشیدگی سے خطہ عدم استحکام کا شکار ہو گا۔ فرانس اسے کم کرانے کیلئے بھرپور تعاون کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی رویہ جنوبی ایشیا کے عوام اور دنیا کے امن کیلئے سخت خطرہ ہے۔ واضح رہے کہ دونوں ممالک کے سیکرٹری خارجہ کے اجلاس میں تعلقات کے فروغ‘ دفاع‘ معیشت اور ثقافت کے شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا۔ اس موقع پر سیکرٹری خارجہ سلمان بشیر نے کہا کہ بھارتی بے جا الزام تراشی نے علاقائی سلامتی کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔ پاکستان نے خلوص نیت سے تحقیقات میں تعاون کی ہر ممکن پیشکش کی لیکن بھارت ٹھوس ثبوت فراہم کرنے میں ناکام رہا،اُلٹا پاکستان پر الزام تراشی اور دبائو بڑھانے کے متعدد حربے استعمال کیے جارہے ہیںاور ممبئی دہشتگرد حملوں کارخ پاکستان کی جانب موڑنے کیلئے اجمل قصاب کوجان بوجھ کر پاکستانی ظاہر کیا گیا جبکہ بھارتی قیادت کی جانب سے غیر ذمہ دارانہ واشتعال انگیز بیان بازی نے علاقائی امن کو سبوتاژ کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ذمہ دار ملک اور قابل بھروسہ ہمسایہ ہے اور ہماری سرزمین کسی کے خلاف استعمال نہیں ہورہی پھر بھی عالمی قوانین کی پاسداری کرتے ہوئے سلامتی کونسل کی قرار دادپرحکومت نے تمام کالعدم تنظیموںکے خلاف فوری کارروائی کی اور دیگر ممالک سے بھی اپنے ملکوں میں عملی اقدامات کے خواہاں ہیں۔