ضمانت دیتے ہیں فاٹا سے فوج نکلنے کے بعد اتحادیوں پر حملے کیلئے سرحد پار نہیں جائیں گے: مولوی عمر

27 دسمبر 2008
پشاور (نیٹ نیوز + بی بی سی ڈاٹ کام) طالبان کے ترجمان مولوی عمر نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ مغربی سرحد سے فوج کے نکل جانے کے بعد وہ اس بات کی ضمانت دیتے ہیں کہ پاکستان کو امریکی دباؤ سے بچانے کے لئے وہ افغانستان میں تعینات امریکی اور اتحادی افواج کے خلاف لڑنے کے لئے سرحد پار نہیں جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ طالبان اور حکومت کے درمیان پس پردہ مذاکرات جاری ہیں تاکہ بھارت اور پاکستان کی کشیدہ صورتحال کے پیش نظر ایک دوسرے پر حملوں میں کمی لائی جا سکے۔ یہ مذاکرات بعض قبائلی مشران کے توسط سے ہو رہے ہیں‘ یہی وجہ ہے کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران باجوڑ اور درہ آدم خیل میں دوطرفہ حملوں میں کچھ حد تک کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ گذشتہ کچھ دنوں سے باجوڑ میں لڑاکا طیاروں نے حملے نہیں کئے۔ اس سلسلے میں پاکستانی فوج کے ترجمان میجر جنرل اطہر عباس نے کہا ہے کہ انہیں حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے بارے میں کسی قسم کا کوئی علم نہیں۔