گلشن اقبال پارک

27 اگست 2009
مکرمی ! گلشن اقبال پارک میں اہل محلہ بوڑھے بیمار، کمر درد، گھٹنے درد کے مریض، شوگر دیگر امراض کے لئے گیٹ نمبر 6 استعمال کرتے ہیں70 سال سے زائد عمر اور بڑھاپے کی کمزوریوں سے اس گیٹ سے آنا جانا آسان ہے اور ہمت طاقت کے مطابق کچھ وقت بیٹھ کر دوست، سہیلیوں کے ساتھ تازہ ہوا میں صبح و شام سیر کرکے اپنے صحت برقرار رکھتے ہیں۔ کچھ عرصہ سے گیٹ نمر6 کو بند کر دیا گیا ہے اب وہیل چیئر والے مریض، عمر رسیدہ اس گیٹ کو ایس ایچ او اقبال ٹائون کے ناجائز حکم سے تالا لگنے سے 400 گھروں کے بوڑھے افراد محروم ہوگئے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ ڈی جی پی ایچ اے(PHA) ایک سکیورٹی گارڈ کھڑا کرکے صبح اور شام دو دو گھنٹے عوام کو کیوں سیر سے محروم رکھتے ہیں؟؟ اگر فنڈز نہیں ہیں تو وزیراعلیٰ پنجاب سے ’’زکوٰۃ فنڈ‘‘ سے لے کر گارڈز بھرتی کریں نیز ایک 14 گریڈ کا تھانیدار ’’چوری چکاری‘‘ کے نام پر گیٹ کو تالا لگا دیتا ہے اور 20 گریڈ کا ڈی جی پارکس بے بس ہوتا ہے؟؟ ہماری پر زور اپیل ہے کہ ایس ایچ او کا لگایا تالا درج بالا اوقات میں کھولا جائے۔(دستخط متعدد اہل محلہ علامہ اقبال ٹائون لاہور)

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...