سعودی عرب میں پاکستانی قونصل جنرل اور ویلفیئر اتاشی کی ہیروئن کیس کے قیدیوں سے ملاقات

27 اگست 2009 (13:58)
جدہ ( امیر محمد خان سے ) سعودی عرب میں پاکستان کے نئے مقرر کردہ سفیر عمر خان شیرزئی کی کوششوں سے پہلی دفعہ جدہ میں گرفتار مشہور چپل ہیرﺅین کیس کے قیدیوں سے پاکستان کے قائم مقام قونصل جنرل مراد علی اور ویلفئر اتاشی مشتاق ورک کی ملاقات ہوئی ۔جن قیدیوں سے ملاقات ہوئی ان میں اطلاعات کے مطابق سعودی ایجنسیوں کی ابتدائی تحقیقات کے مطابق آٹھ گرفتار شدگان میں سے یہ پانچ بے گناہ ہیں ، جبکہ تین گرفتار شدگان اقبال جرم کرچکے ہیں۔ سفیر پاکستان عمرعلی خان شیر زئی نے خادم الحرمین الشریفین شاہ عبداللہ ، اور وزیر خارجہ شہزادہ سعود الفیصل کا شکریہ ادا کیا ہے کہ انہوںنے سفیر پاکستان کی درخواست قبول کرتے ہوئے گرفتار شدگان سے پاکستانی حکام کو ملنے کی اجازت دی۔ بے گناہ افراد کو پاکستان کے حوالے کیا جاسکتا ہے کہ بشرط یہ کہ تحقیقات کو اسکی گہرائی تک پہنچانے کیلئے ان افراد کو سعودی عرب کے حوالے کردیا جائے جو اس مقدمہ کے سلسلے میں پاکستان نے گرفتار کئے ہیں ، سعودی حکومت کے اس مطالبے کے ساتھ اس مقدمہ میںملوث پاکستان میں گرفتا ر لوگوںنے سندھ ہائی کورٹ سے حکم حاصل کرلیا کہ انہیں کسی تحقیقات کیلئے سعودی عرب کے حوالے نہ کیا جائے ۔ سعودی حکومت کے متعلقہ شعبے اور ذمہ داروں سے بات چیت کرنے پاکستان کے وزیر داخلہ رحمان ملک ہفتہ کو صدر پاکستان کے خصوصی ایلچی کی حیثیت میں سعودی عرب پہنچ رہے ہیں جہاں وہ گرفتار شدگان کی رہائی اور اس کیس کے متعلق بات چیت کرینگے ۔

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...