A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

مشرف کا ایشو ہمارا نہیں‘ اکبر بگٹی کے قتل پر دکھ ہوا: شجاعت

27 اگست 2009
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک + ثناءنیوز) مسلم لیگ (ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ اکبر بگٹی کے قتل کے سانحہ پر بہت دکھ ہوا ۔ انہوں نے ہم پر اعتماد کیا تھا وہ فیڈریشن کے حامی قومی سوچ کے حامل رہنما تھے۔ مشرف کا ٹرائل کسی نے کرانا ہے نہ ہو گا۔ مشرف کا ایشو ہمارا نہیں اور نہ ہی کسی اور کا ہونا چاہئے۔ صدر چوہدری شجاعت نے کہا کہ مہنگائی سے توجہ ہٹانے کے لئے جناح پور کا شوشہ چھوڑا گیا ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے چوہدری شجاعت نے انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ بینظیر بھٹو کے دور حکومت میں کراچی سے 60 افراد کو اسلام آباد لا کر قتل کیا گیا اور یہیں دفنا دیا گیا۔ انہوں نے اس تاثر کو رد کیا کہ 92ءکے فوجی آپریشن کے بارے میں سیاسی قیادت لاعلم تھی۔ انہوں نے کہا کہ آپریشن پر کابینہ کو باقاعدہ بریفنگ دی جاتی تھی۔ نواز شریف دورحکومت کے وزیر داخلہ چوہدری شجاعت نے کہا کہ ڈاکوو¿ں کی پشت پناہی کرنے والے پتھاریداروں کی فہرست میں غوث علی شاہ کا نام سرفہرست تھا جو مسلم لیگ (ن) کے صوبائی صدر تھے۔ انہوں نے کہا کہ احتساب بیورو کے سربراہ سیف الرحمان وزیرداخلہ سے زیادہ طاقت ور تھے۔ دریں اثناء چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ ہم نے بلوچستان میں حالات بہتر بنانے کیلئے مارچ سے مئی 2005ءتک اکبر بگٹی سے مذاکرات کئے جن میں سارا معاملہ طے کر لیا گیا تھا۔ تاہم انہوں نے کہا کہ ہمارے سسٹم کے اندر ایک ایسی سوچ اور ایک ایسا عنصر موجود ہے جو ہماری اس کامیابی سے خوش نہیں تھا اور جو چھوٹے صوبے خاص طور پر بلوچستان کے جائز حقوق دینے کے حق میں نہیں تھا۔

کشمیر:  کور ایشو

آج 70سال گزر جانے کے بعد بھی ہم یوم کشمیر منانے پہ اکتفا کر رہے ہیں ۔ کشمیر ڈے ...