مہنگائی کا سفر جاری‘ چینی 47 روپے کلو سے زائد فروخت کرنیوالوں کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری

27 اگست 2009
لاہور (کامرس رپورٹر+ خبرنگار+ نامہ نگاران) مختلف شہروں میں آٹے اور چینی کی قلت کا سلسلہ جاری رہا‘ اشیائے خوردونوش کی قیمتیں بھی مسلسل بڑھ رہی ہیں‘ کمشنر لاہور نے لاہور میں چینی 47روپے کلو سے زائد فروخت کرنیوالے دکانداروں کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں جبکہ گرانفروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کیخلاف آپریشن کے دوران 235افراد گرفتار اور 4504افراد کو ایک لاکھ 30ہزار روپے جرمانہ کیا گیا۔ مصطفی آباد میں آٹے کے حصول کیلئے قطار میں لگا شخص دل کا دورہ پڑنے سے جاں بحق ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق عارف والا‘ دریاخان‘ سلانوالی‘ چشتیاں‘ خوشاب‘ جوہرآباد‘ شورکوٹ‘ ساہیوال اور گوگیرہ میں شہریوں کو سستے آٹے اور چینی کی خریداری کیلئے شدید پریشانی اٹھانی پڑی۔ کامرس رپورٹر کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں چوتھے روزے کے دوران بھی بیشتر علاقوں میں پرچون سطح پر سبزیوں اور پھلوں کی گراں فروشی جاری رہی۔ صارفین کے مطابق دکاندار انکو مقررہ قیمتوں سے زائد قیمتوں پر سبزیاں اور پھل فروخت کر رہے ہیں۔ سبزیوں میں ایک کلو آلو نیا 40روپے کی بجائے 50روپے‘ پیاز27روپے کی بجائے 44روپے‘ ٹماٹر 36روپے کی بجائے 50روپے‘ لہسن چائنہ 94روپے کی بجائے 100روپے‘ ادرک چائنہ 90روپے کی بجائے 100روپے‘ پالک 18روپے کی بجائے 25روپے‘ بینگن 17روپے کی بجائے 23روپے‘ کھیرا 32روپے کی بجائے 40روپے‘ بند گوبھی 44روپے کی بجائے 52روپے‘ پھلوں میں ایک کلو سیب کالاکلو پہاڑی 74روپے کی بجائے 90روپے‘ آم دیسی 40روپے کی بجائے 55روپے‘ آم چونسہ سفید 90روپے کی بجائے سو روپے اور کیلا درجن 44روپے کی بجائے 60روپے میں فروخت کیا گیا ہے۔ ایک کلو برائلر مرغی کے گوشت کی قیمت میں 3روپے اضافہ ہو گیا اور اسکا ریٹ 171روپے سے بڑھ کر 174روپے ہو گیا ہے۔ صوبائی دارالحکومت میں چوتھے روزے کے دوران بھی چینی کی سپلائی 70سے 80فیصد کم رہی اور پرچون سطح پر ایک کلو چینی 52روپے سے 53روپے میں فروخت ہوئی۔ پاکپتن سے نامہ نگار کے مطابق پنجاب حکومت کے رمضان پیکج میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے فراہم کردہ چینی کا وزن مقدار سے کم نکلنے پر شہری الطاف حسین باٹھ نے ضلعی انتظامیہ کے خلاف اندراج مقدمہ کیلئے سیشن کورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کر دی ہے۔ مصطفی آباد/ للیانی سے نامہ نگار کے مطابق مصطفی آباد میں سستا رمضان بازار میں آٹے اور چینی کی فروخت کے دوران شدید بدنظمی دیکھنے میں آئی‘ شدید گرمی میں لائن میں کھڑا 45سالہ شخص ریاض احمد آٹا نہ ملنے پر دل کا دورہ پڑنے سے جاں بحق ہو گیا۔ دریں اثناء صوبائی حکومت نے گرانفروشوں کے خلاف آپریشن کے دوران صوبہ بھر میں گذشتہ روز 7162چھاپوں کے دوران مہنگے داموں اشیا ضروریہ بیچنے والوں کو ایک لاکھ 30ہزار 501روپے جرمانے کئے گئے۔ حکومت پنجاب کے ترجمان کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر شروع کئے گئے اس آپریشن میں 4504افراد کو جرمانے کئے گئے جبکہ 235افراد کو گرفتار کیا گیا۔ خبرنگار کے مطابق وزیراعلیٰ شہبازشریف کے واضح احکامات اور پنجاب بھر کے ہنگامی دوروں کے باوجود صوبائی دارالحکومت میں رمضا ن بازاروں اور سستے آٹے اور چینی کی فروخت کے معاملات سنبھالے نہیں جا سکے۔ رمضا ن بازاروں میں مقررہ قیمتوں سے زائد پر فروخت اور پھلوں‘ سبزیوں‘ دالوں‘ مصالحہ جات کی درجہ دوم کوالٹی کی فروخت کی صارفین شکایت کرتے رہے جبکہ ٹرکوں سے فروخت کئے جانیوالے آٹے کے تھیلوں کے حصول کیلئے طویل قطاروں‘ جھگڑوں‘ دھکم پیل کے مناظر گذشتہ روز بھی دیکھنے میں آئے۔ دوسری طرف چینی کے نہ ملنے پر عوام نے شدید احتجاج کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ چینی کے تھوڑے سے تھیلے ٹرکوں میں لاکر فروخت کرکے دھوکہ دیا جاتا ہے۔ دریں اثناء حکومت پنجاب نے صوبے میں چینی کی پرچون قیمت 47روپے مقرر کرکے انتظامیہ کو اس قیمت پر سختی سے عملدرآمد کرانے کا حکم دیا ہے۔ کمشنر لاہور خسرو پرویز خان نے بدھ کی رات ڈی سی او لاہور نے50مجسٹریٹوں کو احکامات جاری کئے۔ لاہور میں آج سے پرچون کی سطح پر چینی 47روپے کلو فروخت ہو گی جو اس سے زائد وصول کرے اسے موقع پر سزا سنا کر 6مہینے کیلئے جیل بھیج دیا جائے۔