خلیجی ممالک کی دولت طالبان کو طاقتور بنا رہی ہے : ہالبروک

27 اگست 2009
واشنگٹن(ثناء نیوز ) امریکی ایلچی رچرڈ ہالبروک نے کہا ہے کہ خلیجی ممالک کی دولت سے طالبان کی مزاحمت کو تقویت مل رہی ہے ۔ سی این این سے انٹرویو میں رچرڈ ہالبروک نے کہا کہ خلیجی ممالک سے طالبان کو ملنے والے فنڈز ہیروئن اور حشیش کی آمدنی سے کہیں زیادہ ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ دولت مند افراداور خیراتی ادارے مالی معاونت کا بڑاذریعہ ہیں۔ خلیجی ممالک سے فنڈز مقدس مقامات کی زیارتوں پر جانے والے افراد اور حوالے کے ذریعے منتقل کیے جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ طالبان از خود اعلیٰ درجے کی تنظیم نہیں ہے اس کی اصل قوت مالی معاونت ہے ۔ ا مریکی ایلچی نے کہا کہ افغانستان میں جمہوریت کا قیام اوباما انتظامیہ کی اولین ترجیح ہے تاہم جمہوری عمل کی راہ میں رکاوٹیں حائل ہیں اور جمہوریت مغربی ممالک سمیت کہیں بھی مستحکم نہیں ہوئی۔ امریکی سنٹرل کمانڈ کے جنرل مائیک مولن اور جنرل ڈیود پیٹر یاس نے کہا ہے کہ افغانستان میں مزید سخت لڑائی کی توقع ہے جن علاقوں میں امریکی فوج تعینات ہے وہاں طالبان اپنا اثر بڑھار ہے ہیں ۔ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں افغانستان میں سخت مزاحمت کی توقع ہے۔ افغانستان میں مزید امریکی فوجیوں کی تعیناتی سے لڑائی میں تیزی آئے گی۔ آن لائن کے پاکستان وافغانستان کیلئے امریکہ کے ایلچی رچرڈ ہالبروک نے کہا ہے کہ افغان الیکشن کے فاتح کا اعلان قبل از وقت بات ہے۔ استنبول میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم 10فیصد ووٹوں کے نتائج دیکھ کر یہ نہیں کہہ سکتے ہیں کہ وہاں کا آئندہ صدر کون ہوگا،اس حوالے سے بات کرنا قبل از وقت ہوگا۔