لاہور ہائیکورٹ نے سابق ٹیسٹ کرکٹر اعجازاحمد کے خلاف درج چیک باؤنس کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست پر فریقین کے وکلاء کو حتمی بحث کے لئے طلب کر لیا

26 مئی 2016 (15:56)

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس انوارالحق نے کیس کی سماعت کی۔ کرکٹر اعجاز کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مدعی مقدمہ کبھی بھی اعجازاحمد کا بزنس پارٹنر نہیں رہا۔ مدعی بطور ملازم فرائض سر انجام دیتا تھا۔ اعجاز احمد کے خلاف ایک کروڑ سے زائد رقم کا جعلی چیک باؤنس کرا کے بے بنیاد مقدمہ درج کرایا گیا۔ انہوں نے عدالت سے جھوٹا مقدمہ خارج کرنے کا حکم دینے کی استدعا کی۔ مقدمے کے مدعی طاہر جعفری نے عدالت کو بتایا کہ انہوں نے وکیل تبدیل کر لیا ہے. نئے وکیل کو پیش ہونے کے لئے مہلت دی جائے۔ عدالت نے سابق ٹیسٹ کے خلاف چیک باؤنس کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست پر فریقین کے وکلاء کو حتمی بحث کے لئے طلب کرکرلیا، عدالت نے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی۔