غیرملکیوں کے پاکستانی شناختی کارڈ سمیت پکڑے جانے سے جگ ہنسائی ہوتی ہے: سندھ ہائیکورٹ

26 مئی 2016

کراچی (این این آئی) سندھ ہائی کورٹ نے بھارتی خواتین کو پاکستانی شہریت دینے سے متعلق درخواست کی سماعت کے دوران ریمارکس دیئے ہیں کہ لوگوں نے پاکستانی شہریت کو مذاق بنالیا ہے۔ سندھ ہائی کورٹ میں 2 بھارتی خواتین کی جانب سے پاکستانی شہریت کیلئے درخواست کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران خواتین کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ان کی موکلہ شہناز 2008 میں اپنے شوہر حاجی محمد اور بیٹی شہانہ کے ساتھ پاکستان آگئیں تھیں، 2010 میں حاجی محمد کا انتقال ہوا تو اس نے بیٹی کی شادی پاکستانی مرد سے ہی کردی، اب وہ دونوں پاکستانی شہری ہیں لیکن وزارت داخلہ انہیں شہریت نہیں دے رہی۔ جسٹس احمد علی شیخ نے ریمارکس دیئے کہ لوگوں نے پاکستانی شہریت کو مذاق بنالیا ہے، بھارت سے لوگ پاکستان آکر شادی کرلیتے ہیں اور شام تک انہیں شہریت بھی مل جاتی ہے، ایرانی اور افغانی بھی پاکستانی پاسپورٹ لے کرگھوم رہے ہیں اور جب غیرملکی پاکستانی شناختی کارڈ سمیت پکڑے جاتے ہیں تو قوم کی جگ ہنسائی ہوتی ہے۔ یہ حساس معاملہ ہے جس کا ویزا ختم ہوگیا ہے اسے واپس جانا چاہیے، ہم نے ایک دفعہ یہ دروازہ کھول دیا تو پورا بھارت یہاں اْمڈ آئے گا۔