پاکستان اور امریکہ کے درمیان غیر قانونی منشیات کی روک تھام کا معاہدہ

26 مئی 2016

اسلام آباد( نمائندہ خصوصی) پاکستان میں متعین امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل اور پاکستان کے معاشی امور ڈویڑن کے سیکرٹری طارق باجوہ نے ایک تقریب کے دوران چار کروڑ 80 لاکھ ڈالر مالیت کے دو طرفہ تعاون کے ایک سالہ معاہدے پر دستخط کئے۔ اس معاہدے کے تحت امریکی محکمہ خارجہ کا ادارہ برائے بین الاقوامی انسداد منشیات و نفاذِقانون (آئی این ایل) پاکستان میں قانون نافذ کرنے کی صلاحیت کو بہتر بنانے، غیرقانونی منشیات کی روک تھام اور فوجداری نظام کو مضبوط بنانے کے لئے حکومت پاکستان کو اعانت فراہم کرے گا۔امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن امریکہ اور پاکستان کے درمیان جاری طویل شراکت میں ایک اور سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ اس معاہدے سے قانون نافذ کرنیکی صلاحیت ، منشیات کے انسداد اور فوجداری نظام کو بہتر بنانے کے لئے پاکستان کے ساتھ ہمارے تعاون کے عزم کا اعادہ ہوتا ہے۔ امریکہ نے اس نوعیت کے پہلے معاہدے پر 1982ء میں دستخط کئے تھے۔ اس کے بعد ہونے والے سالانہ معاہدوں کے تحت ہزاروں پولیس افسران اور استغاثہ کے وکلاء کی تربیت، پولیس سٹیشنوں کی تعمیر، قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کیلئے گاڑیوں، ساز و سامان، جان بچانے والی حفاظتی اشیاء کی فراہمی میں تعاون کیا گیا۔اس نئے معاہدے کے تحت تربیت، سامان اور انفراسٹرکچر سے متعلق معاونت کے ذریعے صوبائی پولیس اور قانون نافذ کرنیوالے دیگر اداروں کی صلاحیت اور رسائی کو بہتر بنانے سمیت پورے پاکستان میں متعدد پروگراموں کے لئے رقم فراہم کی جائے گی۔ ان پروگراموں میں انصاف کے نظام تک خواتین کی رسائی اور خواتین کی پولیس افسران، استغاثہ کے وکلاء اور ججوں کی حیثیت سے بھرتیوں، انہیں برقرار رکھنے اور ان کی ترقی کے لئے بھی تعاون فراہم کیا جائیگا۔