گٹکا مافیا کا سرپرست ایس ایچ او نکلا، ایس ایس پی کورنگی کے ہاتھوں پولیس افسر کا بیٹر گرفتار

کراچی: آئی جی سندھ غلام نبی میمن کے احکامات کی دھجیاں اڑانے کی کوشش کرنے والا ایس ایچ او گٹکا مافیا کا سرپرست نکلا، ایس ایس پی کورنگی کے ہاتھوں پولیس افسر کا بیٹر گرفتار ہو گیا۔ایک جانب آئی جی سندھ ٹاسک فورس بنا کر گٹکا مافیا کے خاتمے کی بھرپور کوششوں میں مصروف ہیں تو دوسری جانب ایسے عناصر بھی ہیں جو خود قانون کے رکھوالے ہیں. لیکن بدعنوانی میں ملوث ہیں، ایس ایچ او عوامی کالونی کی جانب سے اپنے پرائیویٹ بیٹر کے ذریعے گٹکا ماوا کے مکروہ منظم دھندے میں ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ایس ایس پی کورنگی نے ایس ایچ او عوامی کالونی کے بیٹر کو گرفتار کر کے مقدمہ درج کر لیا.ایس ایس پی کورنگی کی ویجلینس ٹیم نے کورنگی لنک روڈ پر چھاپا مارا تھا. جس میں ایس ایچ او عوامی کالونی کے بیٹر نثار احمد عرف چانڈیو کو گرفتار کیا گیا۔پولیس افسر نے ملزم کو گٹکا ماوا کی بیٹ جمع کرنے کے لیے رکھا تھا، نثار احمد عرف چانڈیو ایس ایچ او کی اسپیشل پارٹی بھی چلاتا تھا اور عوامی کالونی کے علاقے میں منظم جرائم کی سرپرستی کرتا تھا۔نثار احمد چانڈیو نے گٹکا فروخت کرنے کے اپنے بھی تین پوائنٹ بنا رکھے تھے. ٹیم نے مصدقہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کیا. گرفتار ملزم کے خلاف تھانہ کورنگی میں مقدمہ درج کیا گیا ہے. ایس ایس پی کورنگی نے حکام بالا کو ایس ایچ او کے خلاف مس کنڈکٹ پر ایک خط بھی لکھ دیا ہے۔