پالیسی ریٹ 6.5 فیصد رکھنے کے مثبت نتائج برآمد نہیں ہونگے: اقتصادی ماہرین

26 جولائی 2015

لاہور (کامرس رپورٹر) اقتصادی ماہرین اور کاروباری برادری نے پالیسی ریٹ 6.5 فیصد برقرار رکھنے کے سٹیٹ بنک کے فیصلے پر ردعمل میں کہا کہ اقتصادی صورتحال پر مثبت اثر نہیں پڑیگا۔ سرمایہ کاری میں اضافے کا مقصد تو حاصل نہیں ہوا مگر بنکوں میں رقوم جمع کرانے والے کھاتہ داروں اور قومی بچت سکیموں میں رقوم جمع کرانے والوں کا منافع کم ہو گیا۔ان خیالات کا اظہار انسٹیٹیوٹ آف اسلامک بینکنگ اینڈ فنانس کے چیئرمین ڈاکٹر شاہد حسن صدیقی، ڈاکٹر میاں اکرم، فلور ملزم ایسوسی ایشن کے چیئرمین عاصم رضا احمد، لاہور چیمبر ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبر خواجہ خاور رشید، مجاہد مقصود بٹ، میاںوقار، اعجاز بٹ، وقار علی،فاروق عاقل نے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ سٹیٹ بنک کے پالیسی ریٹ کو 6.5 فصد رکھنے کے فیصلے کے مثبت نتائج برآمد نہیں ہوں گے۔