بھوجا ائیرلائن حادثہ کے متاثرین نے تحقیقاتی رپورٹ کو ہائی کورٹ میں چلینج کر دیا، عدالت کا وفاقی حکومت، وزارت داخلہ،بھوجا ائیر لائن،سول ایوی ایشن اور سی ڈی اے سے جواب طلب کر لیا۔

25 ستمبر 2012 (13:20)

اسلام آباد میں ائیر پورٹ کے قریب گر کر تباہ ہونے والے بھوجا ائیر لائن کے طیارہ جس میں   سوار تمام ایک سو ستائس لوگ جاں بحق ہو گئے تھے کے ورثاء نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کرتے ہوئے سول ایوی ایشن کی رپورٹ کو چلینج کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ بھوجا ائیر لائن کی رپورٹ کو پبلک کیا جائے ائیر لائن پچاس لاکھ کی پہلی قسط پانچ لاکھ ورثاء کو  دے کر قانونی کاروائی سے روکنے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط کروانا چاہتی ہے انکوائری بورڈ اپنی رپورٹ ڈی جی سول ایوی ایشن کو بھجوا رہا ہے جو خود ذمہ دار ہیں ۔ عدالت نے پندرہ روز میں متعلقہ اداروں سے جواب طلب کر لیا ہے