فوری انصاف کی فراہمی، وکلا عدالتوں کی معاونت کے لئے سخت محنت کریں: جسٹس افتخار

25 ستمبر 2012

اسلام آباد (آئی این پی) سپریم کورٹ کے چیف جسٹس افتخار محمد چودھری نے مضبوط عدلیہ کےلئے مضبوط بار کو ناگزیر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وکلا کو فوری اور سستے انصاف کی فراہمی یقینی بنانے کےلئے عدالتوں کی معاونت کےلئے سخت محنت کرنی چاہئے۔ وہ پیر کو یہاں سپریم کورٹ میں خانیوال ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کے 13 رکنی وفد سے گفتگو کر رہے تھے جس نے بار کے صدر رانا جعفر علی خان کی سربراہی میں ان سے ملاقات کی ۔ وفد میں بار کے دیگر عہدیداران شامل تھے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ مضبوط بار آزاد عدلیہ کےلئے ناگزیر ہے جہاں بار مضبوط ہوتی ہے ادارہ مضبوط سے مضبوط تر ہوتا ہے۔ انہوں نے وکلا تحریک کے دوران قانونی برادری کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ تحریک اصولوں کےلئے جدوجہد کی تھی۔ وکلا نے ان دنوں عدلیہ کی آزادی اور آئین کی بالادستی کےلئے مسلسل کوشش کی اور ان کا خواب پورا ہوا۔ وفد کے ارکان نے چیف جسٹس کو وکلا کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا اور انہیں خانیوال بار کے دورے کی دعوت بھی دی۔