حج کوٹہ کیس : وفاقی سیکرٹری مذہبی امور سمیت تین افسر آج طلب‘ جیل بھیجا جا سکتا ہے : ہائیکورٹ

25 ستمبر 2012

لاہور (وقائع نگار خصوصی) چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس عمر عطا بندیال نے عدالتی احکامات کے باوجود حج کوٹہ الاٹ نہ کرنے کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواستوں میں وفاقی سیکرٹری مذہبی امور، ایڈیشنل سیکرٹری اور سیکشن آفیسر کو طلبی کے نوٹس جاری کرتے ہوئے قرار دیا ہے عدالتی احکامات پر عمل درآمد نہ کرنے والے افسروں کو جیل بھی بھیجا جا سکتا ہے اگر عدالتی حکم پر عمل درآمد کر دیا جائے تو بے شک مذکورہ افسر آج عدالت میں پیش نہ ہوں وگرنہ وہ عدالت کے روبرو ذاتی طور پر پیش ہوں ۔ فاضل عدالت نے نئے حج ٹورز آپریٹروں کی جانب سے دائر توہین عدالت کی درخواستوں کی سماعت کے دوران سرکاری وکیل کے اس بیان پر سخت برہمی کا اظہار کیا جب سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم امتناعی کی وجہ سے ٹورز آپریٹروں کو حج کوٹہ الاٹ نہیں کیا جا سکا تاہم اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم کی نقل عدالت کو فراہم نہیں کی جا سکی جس پر فاضل چیف جسٹس نے سخت نوٹس لیتے ہوئے کہا وزارت مذہبی امور غلط بیانی کر رہی ہے ۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے حکم امتناعی جاری کیا ہوتا تو عدالت کے روبرو پیش کیا جاتا یہ معاملہ اتنا پیچیدہ نہیں جتنا وزارت مذہبی امور نے اسے بنا دیا ہے ۔ فاضل عدالت نے وزارت مذہبی امور کے تینوں افسران کو آج منگل کے روز اپنی عدالت میں طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کر دی۔
حج کوٹہ