یاسر عرفات کے باقیات کی تجزیاتی رپورٹ جاری تابکاری مواد کے ذریعے قتل کرنے کے شواہد نہیں ملے

25 اکتوبر 2013

رملہ (اے پی پی) سوئس اور روسی ماہرین نے فلسطینی رہنما یاسر عرفات کی باقیات کی تجزیاتی رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق فلسطینی رہنما کو تابکاری مواد پلونیم کے ذریعے قتل کرنے کے شواہد نہیں ملے۔ یہ بات مقامی ذرائع نے جمعرات کو بتائی۔ بتائی۔ یاسر عرفات مرحوم کے موت کی تحقیقات کرنے والی فلسطینی کمیٹی کے سربراہ جنرل توفیق التراوی نے رپورٹ پر تبصرہ کرنے سے گریز کرتے ہوئے کہا کہ بہت جلد ایک پریس کانفرنس میں رپورٹ کے نتائج پیش کردیئے جائیں گے۔ گزشتہ سال نومبر میں سوئس اور روسی ماہرین نے یاسر عرفات مرحوم کی باقیات کے اجزا تجزیے کے لئے لیبارٹری لے گئے تھے۔ یاسر عرفات 2004ءمیں فرانسیسی فوجی ہسپتال میں جاں بحق ہوگئے تھے۔