مصر: جامعہ الازہر کے ہزاروں طلبہ کے مرسی کی حمایت میں مظاہرے جاری

25 اکتوبر 2013

قاہرہ (آن لائن) مصر کے معزول کئے گئے صدر محمد مرسی کی بحالی کےلئے مصر کی سب سے بڑی جامعہ الازہر میں طلبہ و طالبات کے مظاہرے چوتھے روز بھی جاری رہے۔ اہزاروں طلبہ مرسی کے حق میں اور فوج کے خلاف نعرے بازی کر رہے تھے۔۔ مظاہرہ کرنے والے طلبہ چوتھے روز بھی جامعہ الازہر میں درس و تدریس کو زبردستی روکتے رہے۔ جس کے بعد جامعہ میں پولیس داخل ہو گئی اور طلبہ پر تشدد کیا جس سے متعدد طلباء زخمی ہو گئے۔ جامعہ کے طلبہ کا ایک دھڑا جو خود کو فوجی انقلاب کا مخالف قرار دیتا ہے مظاہرین کی قیادت کر رہا ہے۔المنصورہ یونیورسٹی کے صدر سید عبدالخالق نے جامعہ کی انضباطی کمیٹی کو ہدایت کی ہے کہ 25 اساتذہ اور طلبہ کیخلاف کارروائی کی جائے جو مبینہ طور پر فوج کے اقتدار پر تنقید کر رہے ہیں۔ طلبہ کے مظاہروں پر پابندی عاید کرنے کے لئے ایک نئے مسودہ قانون کی تیاری پر بحث شروع ہو گئی ہے۔ جس کے تحت اجتماع اور تقریر کے بنیادی حقوق پر قدغن لگائی جا سکتی ہے۔
مصر