لیسکو کے کوٹے میں 600 میگاواٹ کمی، لاہور میں 6 سے 8 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ

25 اکتوبر 2013

لاہور (نیوز رپورٹر) وزارت پانی و بجلی نے لیسکو کے بجلی کے کوٹے میں کمی کر دی جس کے بعد بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہو گیا ہے۔ وزارت نے لیسکو کو کوٹے کی مد میں 6 سو میگا واٹ کمی کی ہے جس کے بعد لیسکو کو 27 سو میگا واٹ کی بجائے 21 سو میگا واٹ بجلی مل رہی ہے ایسی صورت حال کے بعد لیسکو میں گزشتہ کچھ روز سے بجلی کی بندش ختم کر دی گئی تھی دوبارہ شروع کر دی گئی اور لاہور میں 6 سے 8 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی گئی۔ اس بارے میں آپریشن ڈائریکٹر لیسکو عبدالرحمان نے بتایا کہ لیسکو پاکستان کی سب سے بڑی صارفین رکھنے والی ڈسٹری بیوشن کمپنی ہے اب لیسکو کے کوٹے میں 6 سو میگاواٹ کمی کر دی گئی ہے جس کے بعد لیسکوکا خسارہ بڑھ گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ موسم میں کچھ تبدیلی ہو گئی ہے مگر صارفین نے اے سی وائرکنڈیشنر کا استعمال ترک نہیں کیا جس کی وجہ سے سسٹم میں اضافی بوجھ کم نہیں ہو رہا۔ انہوں نے صارفین سے اپیل کی کہ اے سی کی بجائے پنکھوں کا استعمال کریں۔ دوسری جانب این ٹی ڈی سی ترجمان نے بتایا کہ بجلی کا خسارہ 26 سو میگاواٹ ہے۔ جنریشن 11 ہزار 4 سو میگاواٹ، ڈیمانڈ 14 ہزار میگا واٹ ہے۔ علاوہ ازیں شہروں میں 6 سے 8 جبکہ دیہاتی علاقوں میں 10 سے 12 گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی گئی۔ شرقپور شریف سے نامہ نگار کے مطابق شہر اور گرد و نواح میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 گھنٹوں تک پہنچ گیا۔ لوڈشیڈنگ میں مسلسل اضافے سے لوگوں میں پریشانی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ شیخوپورہ سے نامہ نگارخصوصی کے مطابق شہر اور اسکے نواحی علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ بدستور جاری رہی جس کے خلاف احتجاج میں سیاسی، مذہبی تاجر برادری اور وکلاءبرادری بھی شامل ہو گئی۔ ضلع کچہری میں لوڈشیڈنگ پر وکلاءمیں شدید بے چینی پائی جاتی ہے۔