سردی میں صرف کھانا پکانے کے اوقات میں گیس فراہمی پر غور کر رہے ہیں: شاہد خاقان کی تصدیق

25 اکتوبر 2013

اسلام آباد+لاہور ( نوائے وقت رپورٹ+نیوز رپورٹر) وفاقی وزیر پٹرولیم و قدرتی وسائل شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ سردیوں میں گیس کی مانگ بڑھنے اور رسد کم ہونے کی وجہ سے گھریلو صارفین کو صرف کھانا پکانے کے اوقات میں گیس فراہمی کیلئے غور کر رہے ہیں‘ ایران سے آنے والی گیس مقامی گیس سے 150 فیصد مہنگی جبکہ ایل این جی سے 20 فیصد سستی پڑے گی‘ ٹیرف کے دوبارہ تعین کیلئے ایرانی حکومت سے بات کریں گے‘ ایرانی سفارتخانے کو دورہ ایران کی درخواست بھجوائی تھی‘ اندرون ملک گیس کی قیمتیں بڑھانے کی کوئی تجویز زیر غور نہیں۔ پارلیمنٹ ہاﺅس میں قائمہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد صحافیوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سردیوں کے تین ماہ کے دوران سی این جی سٹیشنوں کو کسی بھی صورت میں گیس فراہم نہیں کر سکتے جبکہ سی این جی کا ویسے بھی کوئی فائدہ نہیں۔ علاوہ ازیں سی این جی ایسوسی ایشن اور ناردرن گیس کے مذاکرات کامیاب ہو گئے۔ ایم ڈی عارف حمید سوئی گیس کے مطابق پہلی ترجیح گھریلو صارفین کو گیس کی فراہمی ہے، دوسرے سیکٹرز کو گیس فراہمی مکمل بند نہیں کی جائے گی، گھریلو صارفین کے بعد بچنے والی گیس دیگر شعبوں کو دیں گے۔ اس موقع پر غیاث پرویز نے کہا کہ موجودہ انتظامیہ کی وجہ سے مشکلات اور گیس چوری میں خاطرخواہ کمی آئی ہے۔