وزیراعظم نواز شریف کا دورہ امریکہ‘ کوئی بڑا بریک تھرو نہیں ہو سکا

25 اکتوبر 2013

اسلام آباد (محمد نواز رضا / وقائع نگار خصوصی) وزیراعظم محمد نوازشریف کے 4 روزہ سرکاری دورہ سے پاکستان اور امریکہ تعلقات میں کوئی بڑا بریک تھرو نہیں ہوا تاہم اس دورے کے نتیجے میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات مزید مستحکم ہوں گے‘ امریکہ پاکستان کی معاشی مشکلات کو بہتر طور پر سمجھنے لگے گا۔ وزیراعظم محمد نواز شریف امریکی حکام کو ڈرون حملوں اور طالبان سے مذاکرات کے بارے میں اپنے موقف کو بہتر انداز میں پیش کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ 1.6 بلین ڈالر کی امداد کی بحالی دوطرفہ سطح پر افسران کے درمیان ہونے والی ملاقاتوں میں طے پا گئی تھی۔ وزیراعظم محمد نواز شریف امریکی حکام کو ڈرون حملے کرنے پر آمادہ کر سکے اور نہ ہی امریکی حکام پاکستان کو بڑی رعایتیں دینے کے لئے تیار نظر آئے۔ پاکستان اور امریکہ کے درمیان تعلقات میں پائی جانے والی سردمہری کو گرمجوشی میں تبدیل کرنے کی کوشش کی گئی۔ وزیراعظم محمد نواز شریف نے امریکی حکام سے ملاقاتوں کے درمیان بڑے مدلل انداز میں ڈرون حملوں کے منفی اثرات اور طالبان سے جنگ سے پیدا ہونے والی صورتحال کے بارے میں اپنا م¶قف پیش کیا۔