چین نے 3200 میگاواٹ بجلی کی پیشکش کر دی‘ توانائی منصوبے اہم سنگ میل ثابت ہونگے : شہباز شریف

25 اکتوبر 2013

لاہور(خصوصی رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ ہم نے انرجی بحران کے خاتمے کے لئے شارٹ ٹرم حکمت عملی کے طور پر سولرانرجی کو ترجیح دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ گزشتہ روز سنکیانگ میں چینی سرمایہ کاروں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت نے برسراقتدار آنے کے بعد ہائیڈل اور تھرمل سمیت بجلی بنانے کے ہر طرح کے منصوبوں پر عملدرآمد کا آغاز کر دیا ہے تاہم حکومت عوام کو ہنگامی بنیادوں پر لوڈشیڈنگ کی شدت سے نجات دلانے کے لئے شمسی توانائی پر بھرپور توجہ دے رہی ہے۔ ہم پنجاب میں ایک ہزار میگاواٹ کا سولر انرجی پارک تعمیر کر رہے ہیں۔ یہ پارک دنیا کے چند بڑے سولرانرجی پارکوں میں سے ایک ہو گا۔ ہمیں اس منصوبے کی تکمیل کے لئے چین کے تعاون کی ضرورت ہے۔ ہم چین سے امداد مانگنے نہیں بلکہ مشترکہ سرمایہ کاری کی تجاویز لے کر آئے ہیں۔ ہم اس مقصد کے لئے چینی سرمایہ کاروں کو ہر طرح کی سہولتیں دیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ پنجاب میں چینی سرمایہ کاروں کے تعاون سے شروع ہونے والے توانائی کے منصوبے پاک چین دوستی کے سفر میں اہم سنگ میل ثابت ہوں گے۔ دریں اثناءوزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے چین کے مختلف شہروں میں واقع بجلی کی پیداوار سے متعلق سامان تیار کرنے والی فیکٹریوں کا بھی معائنہ کیا۔ انہوں نے ونڈمل‘ پاور ٹرانسفارمرز اور سولرز سیلز کی تیاری کے عمل میں گہری دلچسپی کا مظاہرہ کیا۔ وزیر اعلی محمد شہباز شریف کے دورے کے دوران چین نے پاکستان کو 3200 میگا واٹ بجلی برآمد کرنے کی پیشکش کی ہے۔ -چین سے روانہ ہونے سے قبل صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ چین نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی ہے اور چین کی قیادت نے اس دورے کے دوران توانائی کے بحران کے خاتمے کے لئے بھی ہمیں اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا ہے۔ ہم اپنے چینی بھائیوں کے ساتھ مل کر لوڈشیڈنگ کے اندھیروں کو شکست دیں گے۔ چینی سرمایہ کاروں نے ہمیں یقین دلایا ہے کہ وہ پنجاب میں سولر پینل تیار کرنے کا کارخانہ بھی لگائیں گے۔ اس موقع پر وفد میں شامل صوبائی وزیر توانائی شیرعلی خان نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے اس دورے نے پنجاب میں انرجی کے شعبہ میں چینی سرمایہ کاری کی راہیں کھول دی ہیں۔ بعدازاں شہباز شریف چین کا دو روزہ طوفانی دورہ کر کے جمعہ کو علی الصبح واپس لاہور پہنچ گئے۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے بجلی کے بحران کے حل کیلئے جنگی بنیادوں پر جاری اپنی کوششوں کو جاری رکھتے ہوئے چین کے دورے میں سولر ٹیکنالوجی کے حصول کیلئے معاہدے کئے ہیں۔
شہباز شریف

سی پیک… اہم سنگ میل

1960ء کی دہائی کے حوالے سے اگر بات کی جائے تو پاکستان زرعی معاشی، اقتصادی ، ...