بچوں کو پولیو کے قطرے پلانا شرعی طور پر جائز ہیں: پاکستان علما کونسل

25 اکتوبر 2013

اسلام آباد(وقائع نگار) پاکستان علما کونسل کے دارالافتاءنے فتوی جاری کیا ہے کہ پولیو کے قطرے بچوں کو پلانا شرعی طور پر جائز ہیں اور اس پر امت مسلمہ کے ممتاز علما اور ماہرین متفق ہیں کہ پولیو کے قطروں میں کوئی مضر صحت یا خلاف شریعت چیز نہیں پائی جاتی ہے۔ پاکستان علما کونسل کے مرکزی دفتر سے جاری ہونے والے فتوی میں جامعہ الاظہر مصر کے شیخ الاظہر، دارالعلوم حقانیہ کے مولانا سمیع الحق، مفتی رفیع عثمانی، مولانا زاہد محمود قاسمی، مفتی نعیم، قبائل علما کونسل کے مولانا عبدالباری، مولانا انوارالحق مجاہد، پاکستان علما کونسل کے مرکزی چیئرمین حافظ طاہر محمود اشرفی اور دیگر اکابرین اسلام کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ قرآن و سنت ہمیں اپنے بچوں کے لئے دوائی کا حکم دیتی ہے اور پولیو ایک ایسا مرض ہے جو اگر حملہ آور ہو جائے تو پھر اس کا علاج ممکن نہیں ہے اور یہ مرض باقی دنیا سے ختم ہو گیا ہے اور صرف تین اسلامی ممالک میں باقی رہ گیا ہے جن میں پاکستان بھی شامل ہے لہٰذا علما اسلام والدین سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں۔ فتوی میں اقوام متحدہ سے یہ بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ صحت کے لئے کام کرنی والی تنظیموں سے عالمی جاسوسی اداروں کو دور رکھنے کے بارے میں قانون سازی کریں۔ فتوی میں ڈاکٹر شکیل آفریدی کے عمل کی شدید مذمت کی گئی ہے اور کہا گیا ہے ڈاکٹر شکیل آفریدی کے عمل سے قبائلی علاقوں، خیبر پی کے اور بلوچستان کے کئی علاقوں میں لوگوں نے احتجاجاً پولیو کے قطرے اپنے بچوں کو پلانے سے انکار کیا ہے۔