شیخوپورہ: اغواءبرائے تاوان اور قتل کا ملزم مبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک

25 اکتوبر 2013

شیخوپورہ(نامہ نگار خصوصی) تھانہ ہاﺅسنگ کالونی کے علاقہ شرقپور روڈ پر مبینہ پولیس مقابلہ میں ایک خطرناک اغواءبرائے تاوان اور قتل کا ملزم شکیل اختر عرف مانی ہلاک اور اس کے دو ساتھی فرار ہو گئے۔ پولیس کے مطابق پولیس نے اغواءبرائے تاوان اور قتل کی متعدد وارداتوں میںمطلوب خطرناک اشتہاری مجرم شکیل اختر عرف مانی اور اس کے 2 ساتھیوں کو ناکہ پر روکنے کی کوشش کی جس پر ملزمان نے پولیس پر فائرنگ کر دی پولیس کی جوابی فائرنگ سے ملزمان اندھیرے میں زبردست فائرنگ کرتے رہے جس سے ملزمان کی ہی فائرنگ سے ہی ان کا اپنا ساتھی شکیل اختر عرف مانی ہلاک ہو گیا۔ مذکورہ پولیس مقابلہ کی خبر شہر بھر میں جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور دوردراز علاقوں سے لوگوں کی بڑی تعداد اکٹھی ہو گئی جنہوں نے خطرناک اشتہاری ملزم کی پولیس مقابلہ میں ہلاکت پر خوشی کا اظہار کیا اور ایس ایچ او تھانہ ہاﺅسنگ کالونی شاہد رفیق کو پھولوں سے لاد دیا۔ بتایا جاتا ہے ملزم شکیل اختر نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ چند ماہ قبل سریا کے تاجر حاجی خالد اعوان کو 20لاکھ روپے تاوان کے لیے اغواءکیا تھا اور بعدازاں اسے گولی مار کر ہلاک کر دیا، پولیس کے مطابق ملزم معروف سرجن داکٹر محمد یوسف کمبوہ کے قتل میںبھی ملوث تھا۔ ڈی پی او شیخوپورہ ہمایوں بشیر تارڑ نے ایس ایچ او ہاﺅسنگ کالونی شاہد رفیق اور مبینہ پولیس مقابلہ کرنے والی پولیس ملازمین کی ٹیم کو نقد انعام اور تعریفی اسناد دینے کا اعلان کیا ہے۔