ارباب عبدالظاہر کے اغوا کے خلاف کوئٹہ سمیت بلوچستان کے کئی شہروں میں شٹرڈاؤن ہڑتال

25 اکتوبر 2013

کوئٹہ (نوائے وقت نیوز) کاسی قبیلے کے سربراہ اور اے این پی کے سابق صوبائی صدر نواب ارباب عبدالظاہر کاسی کے اغوا کے خلاف کوئٹہ سمیت بلوچستان کے کئی شہروں میں شٹرڈاؤن ہڑتال کی گئی۔ بلوچستان بار کونسل نے بھی اظہار یکجہتی کے لئے ہڑتال کر دی۔ عوامی نیشنل پارٹی نے کوئٹہ سمیت صوبے بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال دی تھی۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز کوئٹہ میں عوامی نیشنل پارٹی کے سابق صوبائی صدر اور کاسی قبیلے کے سردار ارباب ظاہر  خان کاسی کو گھر سے زرغون روڈ جاتے ہوئے پٹیل روڈ سے تین مسلح افراد اغوا کر کے اپنے ساتھ نامعلوم مقام کی طرف لے گئے تھے۔  ارباب ظاہر  کے اغوا کے بعد پولیس اور ایف سی  کی تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے اور انہیں بازیاب کرانے کے لئے کوششیں کی جا رہی ہیں۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ شہر کی ناکہ بندی کر دی گئی ہے اور مغوی کی بازیابی کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔  ارباب عبدالظاہر  کاسی کے اغواء کے بعد کاسی قبائل کے افراد اور پارٹی کارکنوں نے شہر کے مختلف علاقوں کے علاوہ کچلاک میں قومی شاہراہ بلاک کر کے ٹائر جلا کر احتجاج کیا۔  کوئٹہ شہر میں شٹرڈاؤن ہڑتال کے باعث تجارتی و کاروباری  مراکز اور پٹرول پمپ بند رہے جس کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا رہا۔ ہڑتال کی وجہ سے چمن، ژوب،  لورالائی، ہرنائی، قلعہ سیف اللہ، پشین میں بھی دکانیں اور کاروباری مراکز بند رہے۔