جعلی کرنسی کا دھندا

25 اکتوبر 2013

مکرمی! وطن عزیز میں جعلی کرنسی کا دھندہ کرنے والے ان دنوں عروج پر ہیں، خاص طور پر مویشی اور سبزی منڈیوں میں بیوپاری ان کا ہدف ہیں۔ جس بارے الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا پر کچھ خبریں آ رہی ہیں جبکہ ان کا شکار لوگوں کی تعداد زیادہ ہے۔اس ضمن میں ارباب اختیار خصوصاً گورنر سٹیٹ بنک سے گزارش ہے کہ مستقل اور عارضی طور پر قائم ان منڈیوں میں اصلی اور نقلی کرنسی نوٹوں کی جانچ پڑتال کیلئے ماہر عملہ کی زیر نگرانی کا ئونٹر قائم کئے جائیں مختلف بنکوں کو یہ ڈیوٹی دینے بارے غور کیا جائے اور لوگوں میں مشتہر کیا جائے کہ وہ خرید و فروخت میں کرنسی کی جانچ پڑتال کیلئے استفادہ حاصل کریں اس اقدام سے کم از کم منڈیوں میں ایسے مکروہ دھندہ سے نجات پانے میں ضرور مدد ملے گی۔ مندرجہ بالا تجویز اگر قابل عمل ہے تو عوام الناس کی بھلائی کیلئے ضرور عملی اقدام کریں یا آپ کی نظر میں اس کا کوئی بہتر سدباب ہے تو مہربانی فرمائیں تاکہ بہت سارے خاندان نقصان سے بچ سکیں۔(احسان الٰہی 2 گرین ووڈ سٹریٹ سیالکوٹ سٹی)