خاک ہو جائیں گے ہم تم کو خبر ہونے تک

25 نومبر 2015

مکرمی! جیسے جیسے سردی بڑھتی جا رہی ہے گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے گھریلو خواتین میں بڑھتا خوف و ہراس حشر برپا کئے ہوئے ہیں گیس کے پریشر میں دن بدن کمی ہو جا رہی ہیں۔ جس کے باعث گھروں میں کھانا تیار کرنا محال ہوگیا جبکہ مجبوری کی وجہ سے بازاری کھانے سے لوگ پیٹ کے امراض میں مبتلا ہونے لگے ہیں۔ مہنگائی کے باعث عوام کے گھروں کے چولہے پہلے ہی ٹھنڈے پڑ چکے تھے۔ اوپر سے ستم گیس کی بندش نے مزید کسر پوری کر دی غریب کےلئے نہ گرم کپڑے ، نہ زیتون سے بنے کھانے، نہ دڑائی فروٹ، نہ گیس سے گرما گرم کمرے ملیں گے۔ جو کہ ہماری مٹھی بھر اشرافیہ کو نصیب ہیں۔ میری اعلیٰ حکام سے اپیل ہے۔ برائے مہربانی فرما کر کھانا بنانے کے اوقات یعنی تین ٹائم گیس پریشر سے دیں۔ (بشریٰ منظور راجہ پارک فیصل آباد)