بلدیاتی انتخابات، مسلم لیگ ن پنجاب میں دوبارہ گنتی کے بہانے نتائج تبدیل کر رہی ہے: بلاول

25 نومبر 2015

کراچی (سٹاف رپورٹر) پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے اور دوسرے مرحلے میں حکمراں جماعت مسلم لیگ ن اپناحکومتی اثررسوخ استعمال کرکے دوبارہ گنتی کے بہانے نتائج تبدیل کر رہی ہے اور بلدیاتی انتخابات میں اپنا حکومتی اثر ڈال رہی ہے، بلاول بھٹو زرداری نے ان خیالات کا اظہار بلاول ہائوس میں پیپلزپارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور وٹو سے ملاقات کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر شیری رحمان بھی موجود تھیں۔ پیپلزپاٹی پنجاب کے صدر میاں منظور وٹو نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو پنجاب میں پہلے اور دوسرے مراحل میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں ہونے والی دھاندلی کے متعلق بریفنگ دی اور شکایت کی کہ مسلم لیگ ن پورے پنجاب میں خاص طور پر منڈی بہاوالدین میں نتائج تبدیل کرنے کے لئے دبائو ڈال رہی ہے۔ منظور وٹو نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو جنوری 2016ء دوسرے ہفتے میں امیر بیگم ویلفیئر ٹرسٹ کی جانب سے منعقدہ 50 مستحق جوڑوںکی اجتماعی شادیوں کی تقریب میں مہمان خاص کے طور پر شرکت کی دعوت دی جس پر چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے انہیں یقین دلایا کہ وہ اس تقریب میں شرکت کریں گے۔ بلاول نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کے بعد وہ پنجاب کا دورہ کریں گے اور پارٹی کارکنان سے ملاقاتیں کرکے پارٹی کو مزید مضبوط اور منظم کیا جائے گا۔ دریں اثناء اپنے بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ایس جی ایس کوٹیکنا کیس میں متعلقہ عدالت کی جانب سے سابق صدر آصف علی زرداری کو بری قرار دینے سے ایک بار پھر یہ ثابت ہوگیا ہے کہ مخالفین ہمیشہ سیاسی طور مقابلہ کرنے میں ناکامی کے بعد جھوٹے مقدمات اور ریفرنسزکی توسط سے نشانہ بنا رہے ہیں۔ آصف علی زرداری کے کیس میں بری ہونے سے بیگم نصرت بھٹو اور شہید محترمہ بینظیر بھٹو کی بیگناہی کی پوزیشن بھی واضح ہوگئی ہے، پیپلزپارٹی کی قیادت کو ڈرانے دھمکانے کے لئے مختلف حکمران مسلسل نشانہ بناتے رہے اور تقریباً دو دہائیوں سے ریاست کے لاکھوں روپے خرچ کرکے جھوٹے مقدمات کے ذریعے انتقامی کارروائیاں کی گئیں۔ حکمرانوں نے سالہا سال پیپلزپارٹی کی قیادت کو ایک کورٹ سے دوسری کورٹ تک اور جیلوں سے لے کر ٹارچر سیلوں تک دھکیلا لیکن اس کے باوجود ان کے خلاف ایک بھی الزام ثابت نہ کر سکے۔ بلاول بھٹو زرداری نے مطالبہ کیا کہ جنہوں نے ریفرنسز کے ذریعے شہید محترمہ بینظیر بھٹو کو جلاوطن ہونے پر مجبور کیا اور آصف علی زرداری کو کئی سالوں تک جیلوں میں قید کروایا ، انہیں معافی مانگنی چاہئے۔