بارشیں جاری ‘ لاہور‘ پشاور اور سوات میں چھتیں گرنے سے7 افراد جاں بحق ‘5 زخمی

25 مارچ 2014

لاہور+ اسلام آباد+ پشاور (نامہ نگار+ نمائندگان+ نوائے وقت رپورٹ+ ایجنسیاں) پاکستان کے مختلف علاقوں میں گذشتہ روز بھی بارش کا سلسلہ جاری رہا، بالائی علاقوں میں برف باری اور لینڈ سلائیڈنگ کے بعد کئی سڑکیں بند ہو گئیں۔ لاہور کے علاقے شادباغ میں ایک گھر کی بوسیدہ چھت گرنے سے ایک شخص جاں بحق جبکہ 4زخمی ہوگئے۔ پشاور کے علاقے صدر میں شدید بارش کے باعث تین منزلہ عمارت کے ایک حصہ کی چھت گرنے سے ایک ہی خاندان کے تین افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ سوات میں بھی ایک گھر کی چھت گرنے سے 3بچے دم توڑ گئے۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق پشاور کے علاقے صدر کینٹ میں بارش کے باعث تین منزلہ عمارت کا ایک حصہ گرگیا جس کے نتیجے میں میاں بیوی اور چار سالہ بیٹا ملبے تلے دب گئے،  ریسکیو ٹیموں نے کارروائی کرتے ہوئے تینوں کو ملبے سے نکال کر لیڈی ریڈنگ ہسپتال منتقل کر دیا جہاں وہ  دم توڑ گئے جبکہ سوات کے علاقے مینگورہ میں ایک گھر کی چھت گرنے سے 3بچے دم توڑ گئے جبکہ ایک خاتون زخمی ہو گئی۔ کوئٹہ سمیت بلوچستان کے متعدد علاقوں میں شدید بارشوں کے باعث طغیانی سے تین سو مکانات کو نقصان پہنچا، سیلابی ریلے میں پانچ گاڑیاں بھی بہہ گئیں، کوئٹہ، دالبندین، لورالائی، مستونگ، قلات، نوشکی، خاران اور پنجگور میں شدید بارشوں نے طغیانی پیدا کر دی، دالبندین میں طوفانی بارشوں میں تیزی اور سیلابی ریلوں میں طغیانی کے باعث ایک مسافر کوچ، ایک ٹرالر سمیت پانچ گاڑیاں بہہ گئیں۔ دوسری طرف راولپنڈی اور اسلام آباد میں موسم بہار کی بارش نے قدرتی نظاروں کا حسن بھی نکھار دیا۔ بٹگرام شہر اور گردونواح میں بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی۔ باغ کے بالائی علاقوں میں برف باری اور لینڈ سلائیڈنگ کے بعد کئی سڑکیں بند ہو گئیں۔ لاہور میں دن بھر آنکھ مچولی کے بعد بادل کھل کر برس پڑے۔  اور ٹھنڈی ہوائیں چل پڑیں جس کے بعد رت ہی بدل گئی۔ ملتان، وہاڑی اور گردونواح میں بادل جم کر برسے۔ پشاور میں بھی جل تھل ہو گیا۔ کوئٹہ، بارکھان اور خضدار میں بھی خوب بارش ہوئی۔  آئندہ چوبیس گھنٹے  مزید بارش اور  چند مقامات پر آندھی اور ژالہ باری کی پیشگوئی  کی گئی  ہے جبکہ ننکانہ صاحب، گوجرانوالہ، سرگودھا سمیت کئی شہروں میں بھی بارش ہوئی۔ علاوہ ازیں حالیہ بارشوں اور برفباری سے راول ڈیم میں پانی کی سطح میں اضافہ ہوا ہے۔ راول ڈیم میں پانی کی سطح 17.5فٹ تک پہنچ گئی۔ راول ڈیم کے سپل وے پانی کی سطح خطرناک حد تک بلند ہونے پر کھول دئیے گئے۔ این این آئی  کے مطابق شدید موسلادھار بارش کے بعد ڈیرہ اسماعیل خان کے علاقہ کڑی شموزئی کے گائوں فتح علی میں رودکوہی رمک سے آنے والے پہاڑی پانی نے تباہی مچا دی۔ درجنوں مکانات زمین بوس ہو گئے اور کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچا اور مال مویشی بہہ گئے۔  ننکانہ صاحب سے نمائندہ نوائے وقت کے مطابق ننکانہ صاحب اور گردونواح میں دو دن سے جاری وقفے وقفے سے موسلادھار بارش کے بعد سردی کی لہر دوبارہ لوٹ آئی۔ علاوہ ازیں شادباغ کے علاقہ وسن پورہ میں فلک شیر کے گھر کی خستہ حال چھت بارش کے بعد گرنے سے ملبے تلے دب کر فلک شیر ہلاک جبکہ 4افراد زخمی ہو گئے۔ زوردار دھماکے سے چھت گرنے سے موقع پر اہل علاقہ کی بڑی تعداد اکٹھی ہو گئی جبکہ اطلاع ملنے پر پولیس، ریسکیو 1122اور ایدھی سمیت دیگر امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور انہوں نے رات گئے تک امدادی سرگرمیاں جاری رکھیں۔ اے پی پی کے مطابق محکمہ موسمیات کے مطابق ملک کے بالائی علاقوں میں جاری  بارش کا سلسلہ ( آج) منگل کی دوپہر تک وقفے وقفے سے جاری رہیگا۔آئندہ 24گھنٹوں کے دوران  اسلام آباد، بالائی پنجاب (راولپنڈی، گوجرنو الہ ، لاہور، فیصل آباد، سرگودھا ،ساہیوال ڈویژن )، بالائی خیبرپی کے ، کشمیر اورگلگت بلتستان میں بیشترمقامات پر گرج چمک اور تیز ہو ائوں کیساتھ مزید بارش کا امکان ہے۔