کرم ایجنسی ....فورسز کی گولہ باری 11 شدت پسند جاں بحق‘ وانا : چیک پوسٹ پر حملہ ناکام‘ اہلکار کی خودکش پر فائرنگ دونوں مارے گئے

25 جولائی 2011
پارہ چنار+ وانا (نامہ نگار+ اے این این + ریڈیو نیوز) کرم ایجنسی میں سکیورٹی فورسز کی گولہ باری سے مزید 11شدت پسند جاں بحق 6 زخمی ہو گئے۔ وانا میں چیک پوسٹ پر حملہ ناکام بنا دیا گیا، خودکش بمبار اور ایک اہلکار مارا گیا۔ خیبر ایجنسی میں دو گروپوں کے درمیان جھڑپ اور فائرنگ کے واقعات میں دو خواتین سمیت 6 افراد جاں بحق ، 8 زخمی ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق تحصیل مسود زئی میں فورسز نے شدت پسندوں کے مشتبہ ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جس سے شدت پسندوں کے دو ٹھکانے مکمل طورپر تباہ ہوگئے۔ خودکش حملہ آور چیک پوسٹ کی جانب بڑھ رہا تھا کہ سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے حملہ آور کو ہلاک کر دیا۔ فائرنگ کے نتیجے میں خودکش حملہ آور دھماکے سے پھٹ گیا اس دوران ایک سکیورٹی اہلکار جاں بحق ، 7 زخمی ہو گئے۔ وادی تیراہ میں دو گروپوں کے درمیان جھڑپ میں چار افراد ہلاک اور آٹھ زخمی ہو گئے۔ باڑہ کے علاقے شلوبر میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے دو خواتین کو قتل کر دیا، شمالی وزیرستان میں ریموٹ کنٹرول بم دھماکے میں سات اہلکار زخمی ہو گئے۔ میران شاہ کے علاقے کتب خیل امریکہ کےلئے جاسوسی کرنے کے الزام میں ایک شخص کو قتل کر کے نعش کو ویرانے میں پھینک دیا گیا۔ مہمند ایجنسی میں عسکریت پسندوں نے ایف سی چوکی پر حملہ کیا جوابی کارروائی پر فرار ہو گئے۔ دریں اثناءکالعدم تحریک طالبان پاکستان کے وزیرستان حلقہ محسود کے امیر مولانا ولی الرحمان محسود نے نوائے وقت کو فون پر جنوبی وزیرستان کے علاقے چمکلائی میں ہونے والے خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنوبی وزیرستان میں آخری سپاہی کی موجودگی تک خودکش حملے جاری رہیں گے۔
کرم ایجنسی