لیاری پپلز پارٹی کا گڑھ ہےاورآئندہ بلاول بھٹو یہی سےالیکشن لڑیں گے۔ صدر زرداری

25 جولائی 2011 (10:09)
صدر آصف علی زرداری کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک ،وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ، صوبائی وزیر داخلہ منظور وسان اور دیگرافسران موجود تھے۔ اجلاس میں وزیرداخلہ نے کراچی میں امن و امان کے حوالے سے بریفنگ دی۔اس موقعے پر لیاری کے ترقیاتی پیکچ پر بھی خصوصی گفتگو ہوئی۔ صدر نے لیاری کے نوجوانوں کو روزگاراور عوام کو صحت ،تعلیم اوردیگر تمام تر سہولیات فراہم کرنے کی خصوصی ہدایت کی۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ گزشتہ ڈھائی سال میں لیاری کے ترقیاتی کاموں پر ڈھائی ارب روپے خرچ کیے جاچکے ہیں ۔ان کا کہناتھا کہ لیاری کے ترقیاتی کاموں کوانتہائی تیز رفتاری سے مکمل کیا جائے گا اور وہ لیاری کے ترقیاتی کاموں کاجائزہ ہر دو ہفتے میںلیں گے۔۔ صدر کا کہنا تھا کہ لیاری پپلز پارٹی کا گڑھ ہے اور آئندہ بلاول بھٹو یہی سے الیکشن لڑیں گے۔ ۔ صدر آصف علی زرداری نے اس موقعے پر ڈیپارٹمنٹل فٹ بال ٹیل پر پابندی ہٹانے کی بھی ہدایت کی۔ انھوں نے کہا کہ لیاری کے علاقے میں موجود ککری گراؤنڈ کو عالمی طرز کا فٹبال اسٹیڈیم بنایا جائے گا۔اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کچھی رابطہ کمیٹی کے رہنما حسین کچھی نے کہا کہ صدر نے لیاری کے نوجونوں کو پانچ سو رکشے دینے کا کہا ہے جس میں سے ڈھائی سو رکشے وفاقی حکومت اور ڈھائی سو رکشے صوبائی حکومت فراہم کرے گی۔