کراچی میں ٹارگٹ کلنگ نہ روکی جاسکی، دن بھر میں بائیس افراد ہلاک جبکہ بیس سے زائد زخمی ۔

25 جولائی 2011 (03:05)
کراچی میں ٹارگٹ کلرز نے دو گھنٹوں کے دوران ، نارتھ کراچی ، سرجانی ٹاؤن ، انڈا موڑ اور لیاقت آباد میں سات افراد کی جان لے لی، جبکہ اتوار کودن بھرکے دوران فائرنگ کے واقعات میں مرنے والوں کی تعداد گیارہ ہوگئی ،اتوار کی صبح قائد آباد ، رامسوامی ، بلدیہ ٹاؤن اور ملیر میں نامعلوم دہشتگردوں نے چار افراد کو قتل کردیا۔شرپسند عناصر کی جانب سے وقفے وقفے سے چار راکٹ بھی فائر کیے گئے جن کے نتیجے میں تین افراد شدید زخمی ہوگئے۔ادھر انڈا موڑ کے علاقے میں بیکری پر کھڑے تین نوجوانوں کو قتل کردیا گیا۔ نارتھ کراچی کے علاقے ایدھی موڑ پر بھی نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو ہلاک جبکہ دو کو زخمی کردیا۔ لیاقت آباد دس نمبر میں فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک جبکہ دو افراد زخمی ہوگئے۔ گھاس منڈی میں بھی ایک شخص فائرنگ کے باعث ہلاک ہوا۔ سرجانی میں دو گروپوں کے درمیان فائرنگ سے ایک شخص قتل اورایک زخمی ہوگیا۔ یوپی موڑ اور بلدیہ ٹاؤن میں بھی فائرنگ سے دو افراد کو قتل کردیا گیا۔ کریم آباد میں میڈیکل اسٹور کے قریب فائرنگ سے تین افراد ہلاک جبکہ ایک زخمی ہوگیا۔ پی آئی بی کالونی میں بھی ایک شخص کو قتل کردیا گیا۔ رات گئے اورنگی بخاری کالونی میں بھی دہشتگردوں نے دو افراد کو قتل کردیا۔ ڈسکو موڑ پر بھی فائرنگ سے دو افراد جاں بحق ہوگئے۔ دوسری جانب شہر میں جاری بدامنی کے خلاف علاقہ مکینوں نے ٹائر نذر آتش کرکے شاہراہ فیصل بلاک کردی۔