جاگیرداری نظام پاکستان میں جمہوریت کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے: احسان وائیں

25 جولائی 2009 (14:38)
لاہور (خبرنگار خصوصی) پاکستان میں حکمران اتحاد کی شریک تیسری بڑی پارٹی کے سیکرٹری جنرل اور ممتاز سیاستدان احسان وائیں نے کہا ہے کہ جب تک پاکستان کے 17 کروڑ عوام کو جمہوری عمل میں شریک نہیں کیا جاتا اور ملک سے جاگیرداری نظام ختم نہیں کیا جاتا اور عوام کو انکے حقوق لوٹائے نہیں جاتے\\\' تب تک ملک میں جمہوریت قائم نہیں ہوسکتی۔ وہ ایک مقامی ہوٹل میں تھنک ٹینک حلقہ تعمیر پاکستان کے زیراہتمام ایک نشست سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام کو چاہئے کہ وہ قومی دولت کو کھا جانیوالے بددیانت افراد کی بجائے عوام کی خدمت کرنیوالے دیانتدار سیاسی کارکنوں کو انتخابات میں منتخب کریں۔ ایڈمرل (ر) جاوید اقبال (تحریک انصاف) نے کہا کہ ملک کے عوام میں سیاسی شعور کے ساتھ اپنے ووٹ کی قدر و قیمت کا احساس بھی جگایا جائے اور ملک کے وسائل پر اجارہ دار طبقوں کی بجائے سیاسی کارکنوں کو پارلیمنٹ کیلئے منتخب کیا جائے۔ معروف سیاسی دانشور\\\' آرکیٹیکٹ محمد افضل ملک نے کہا کہ پاکستان کی سیاسی پارٹیوں میں خاندانی اور وراثتی سیاست کی بجائے پارٹیوں میں انتخابات کرائے جائیں اور کارکنوں کی سیاسی خدمات پر عوام انہیں منتخب کریں۔ اجلاس میں سوویت یونین کے آخری صدر گورباچوف کے ایک سابق مشیر رانا غضنفر بھی شریک ہوئے۔