پاکستان میں آئین کی بالا دستی ‘ اسلامی اقدار کے فروغ کیلئے کوشش کرینگے:علماء

Aug 25, 2018

شیخوپورہ(نمائندہ نوائے وقت)گردونواح میں عید الاضحی مذہبی جوش و خروش کیساتھ منائی گئی کھلے میدانوں مساجد اور مدارس میں عید الاضحی کے روح پرور اجتماعات منعقد ہوئے جہاں لاکھوں فرزندان توحید نے شرکت کی ، بعدازاں مسلمانوں نے سنت ابراہیمی ادا کرتے ہوئے قربانی کے جانور ذبح کئے، عیدکے بڑے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے علماء کرام نے کہا کہ عید الاضحی کا بنیادی فلسفہ قربانی، ایثار، خلوص اور راہ خدا میں اپنی عزیز ترین چیز نچھاور کر دینا ہے اگر عید الاضحی سے قربانی کا تصور اور فلسفہ نکال دیا جائے تو پھر عید الاضحی کا مفہوم بے معنی ہوجاتا ہے، حضرت ابراہیم اور حضرت اسماعیل نے اطاعت خداوندی میں حکم خداوندی اور رضائے الہی کو انجام دیتے ہوئے قربانی دی، اس مقصد کے پس پشت ذاتی مفادات یا خواہشات نہیں تھیںاورنہ وہ کسی نمود و نمائش کے لیے خود کو قربان کر رہے تھے،انبیائے کرام کی یہ عظیم قربانی انسانیت کے لیے روشن مثال اور مسلمانوں کے لیے اطاعت و ایثار کا حسین نمونہ ہے سنت ابراہیمی واسماعیلی کوپورا کرنے کے لیے جانوروں کی قربانی کے ساتھ ساتھ اپنے مفادات،ذاتی خواہشات،ٖغلطیوں، کوتاہیوں اور خطاؤں کی بھی قربانی ضروری ہے بطور مسلمان ہمارا ایمان ہے کہ اللہ تعالی کے حضورجانورکا گوشت نہیں صاحب قربانی کی نیت اور حسن عمل پہنچتا ہے ہمارا ہدف،ہماری نیت، ہمارا ایثار، ہمارا خلوص اور جذبہ پیش ہوتاہے۔ہمیں اپنی توجہ اس جانب مرکوز رکھنی چاہئے کہ کتنے اخلاص اور ایثار کے ساتھ قربانی پیش کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ہمیں عہد کرنا چاہیے کہ دنیا کے تمام محکوم، مظلوم طبقات اور استحصال زدہ عوام کے حقوق کے لیے جدوجہد کریں گے، پاکستان میں عدل وقانون کے نفاذ، آئین کی بالا دستی اور صحیح اسلامی اقدار کے فروغ کے لیے کوشش کریں گے۔

مزیدخبریں