انجم عقیل فرار کیس‘ 34 ملزموں کو عدالت نے بری کر دیا

25 اگست 2011
راولپنڈی (نوائے وقت رپورٹ) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نمبر ایک کے جج ملک محمد اکرم اعوان نے پولیس تھانہ شالیمار اسلام آباد کی طرف مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی انجم عقیل خان کیس میں ملوث اختر اعوان‘ شوکت خان‘ مٹھو خان‘ رانا ظہیر‘ عامر شہزاد خان اور تبریز خان سمیت 34 ملزمان کو بے گناہ قرار دے کر مقدمے سے ڈسچارج کرنے کی درخواست منظور کر لی اور ان ملزمان کو مقدمے سے ڈسچارج کر دیا ۔ بدھ کے روز سماعت کے دوران خصوصی عدالت کے جج نے پولیس کو انجم عقیل خان سمیت سترہ افراد کے خلاف آئندہ تاریخ سماعت پر چالان پیش کرنے کی ہدایت کی۔ تھانہ شالیمار کے ایڈیشنل ایس ایچ او منشا خان نے کہا کہ آئندہ تاریخ سماعت پر چالان پیش کر دیا جائے گا۔ مقدمے کی سماعت 30 اگست پر ملتوی کر دی گئی ہے۔ دریں اثنا انجم عقیل نے نوائے وقت سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ 34 افراد کو بے گناہی ثابت ہونے پر مقدمے سے ڈسچارج کیا گیا ہے۔
انجم عقیل