زرداری سے چینی کمپنی کے وفد کی ملاقات، توانائی کے منصوبوں پر تبادلہ خیال

25 اگست 2011
اسلام آباد (آن لائن) صدر مملکت آصف علی زرداری سے بدھ کو چینی کمپنی کے وفد نے ملاقات کی جس میں توانائی کے شعبے میں مختلف منصوبوں کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ایوان صدرمیں ہونے والی اس ملاقات میں چینی کمپنی ٹی بی ای اے کے وفد کی قیادت پاکستان میں کمپنی کے نمائندے ژایولی لیانگ اور چن کوئن لیانگ کررہے تھے جبکہ پاکستانی وفد کی طرف سے وزیر پانی و بجلی سید نوید قمر ‘ صدر کے سیکرٹری جنرل سلمان فاروقی ‘ خزانہ ‘ اقتصادی امور ڈویژن کے سیکرٹری ‘ چیئرمین واپڈا سمیت دیگر حکام موجود تھے۔ ملاقات کے دوران صدر زرداری نے کہا کہ پاکستان کو اس وقت توانائی کے بحران کا سامنا ہے اور اپنی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے مختلف منصوبے شروع کئے ہوئے ہیں جس میں اس کی ترجیح دیامر‘ بھاشا اور بونجی میں ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر ہے۔ انہوں نے چینی کمپنی پر اس بات پر زور دیا کہ وہ پاکستان میں توانائی سمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کریں۔ چینی کمپنی نے صدرکو یقینی دہانی کرائی کہ ان کی کمپنی پاکستان میں توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے اپنا مکمل تعاون فراہم کرے گی جبکہ صدر زرداری نے متعلقہ اداروں کو احکامات جاری کئے کہ گڈو ‘ اوچ ٹرانسمیشن لائن پراجیکٹ کیلئے تمام قواعد و ضوابط مکمل کئے جائیں تاکہ رواں سال ان ٹرانسمیشن پراجیکٹ کیلئے معاہدہ کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ غیرملکی سرمایہ کاروں اور تاجروں کیلئے سخت سکیورٹی انتظامات کئے جائیں گے۔آن لائن کے مطابق سندھ میں ذوالفقار آباد کے مجوزہ نیو سٹی میں چینی کمپنی نے معاشی زون قائم کرنے کی تجویز پیش کی اور مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کرنے کی پیشکش کی۔ نئے معاشی زون میں سرکردہ سرمایہ کار اور صنعت کار موجود ہیں۔ اس بات کا اظہار خیال صدر زرداری کے زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں بریفنگ کے دوران کیا گیا۔
زرداری / چینی کمپنی