کراچی کو خانہ جنگی کی طرف دھکیلا جارہا ہے، حکومت سنجیدگی کا مظاہرہ کرے تو کراچی میں تین دن میں امن قائم ہوسکتا ہے۔ فاروق ستار

25 اگست 2011 (14:29)
لاہور میں ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کی جانب سے دیے گئے افطار ڈنر کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ کراچی کے حالات جان بوجھ کر خراب کیے جارہے ہیں اگر حکومت سنجیدہ ہو تین دن میں امن قائم ہوسکتا ہے۔ دو فیصد جاگیردار اور سرمایہ دار طبقہ حالات خراب کرنا چاہتا ہے لیکن ملک کے اٹھانوے فیصد عوام اس سازش کو ناکام بنا دیں گے ۔ فاروق ستار نے کہا کہ اس وقت کراچی کی نہیں ملکی بقا کی بات ہے اگر حکومت بھتہ خوروں اور قاتلوں کو کیفرکرادار تک پہنچانے کے اقدامات کرے تو ایم کیو ایم ہر ممکن تعاون کرے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ وڈیرے اور جاگیردار اپنا قبلہ درست کر لیں ورنہ ان کی تصویریں صرف دیواروں پر لٹکی رہ جائیں گی ۔ لاہور ہی میں لیفٹنینٹ یاسر عباس شہید کو محب وطن دو ہزار گیارہ قرار دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ کراچی میں لسانی یا سیاسی جھگڑا نہیں بلکہ جرائم پیشہ اور بھتہ خورمافیا فسادات کا ذمہ دار ہے ان کا کہنا تھا کہ جو حکومت عوام کے جان و مال کا تحفظ نہ کرسکے ایسے حکمرانوں کو حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں ۔ اس سے پہلے متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما فاروق ستار اور حیدر عباس رضوی نے اسلام آباد میں سپریم کورٹ کے رجسٹرار سے ملاقات کی۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ وہ کراچی کے حالات پرلیے گئے از خود نوٹس میں سپریم کورٹ کی معاونت کرنے آئے ہیں، عدالت سے انصاف کی پوری توقع ہے۔ متاثرہ فریق کی حیثیت سے ازخود نوٹس کا حصہ بننا چاہتے ہیں

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...