نواز شریف تصادم کی سیاست چھوڑ دیں تو بات چیت ہوسکتی ہے: بلاول

24 نومبر 2017 (22:15)
نواز شریف تصادم کی سیاست چھوڑ دیں تو بات چیت ہوسکتی ہے: بلاول

 چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے نواز شریف سے بات چیت کا اشارہ دیدیا۔ بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ نواز شریف تصادم کی سیاست چھوڑ دیں تو بات چیت ہو سکتی ہے۔ نواز شریف کی سیاست میں نیا کچھ نہیں ہے۔ نواز شریف اپنی ذات کی سیاست کرتے ہیں۔ نواز شریف خطرناک کھیل کھیل رہے ہیں۔ وہ جمہوریت کو کمزور کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ مسلم لیگ ن میثاق جمہوریت پر بات کرنا چاہتی ہے تو پہلے اقدامات کرے۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول لاہور آئے تو سیاسی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ، رہنماﺅں اور کارکنوں کی خوشیوں میں بھی خصوصی شرکت کی۔ بلاول جب تک سٹیج پر موجود رہے، تب تک باراتی اور میزبان دولہا دلہن کے بجائے بلاول کے ساتھ تصویریں بنواتے رہے۔ نواز شریف اور جمہوریت کا کوئی تعلق نہیں۔ میاں صاحب کو مشورہ دیتے ہیں تصادم کی سیاست چھوڑ دیں‘ نواز شریف طور طریقے بدلیں تاکہ بات چیت کا ماحول پیدا ہو۔ میاں صاحب کہتے کچھ ہیں اور کرتے کچھ ہیں۔ ہمیں نواز شریف کے اقدامات اور طریقہ کار سے مسئلہ ہے۔ پیپلز پارٹی کی تاریخ جدوجہد کی تاریخ ہے۔ ہمارا بنیادی منشور روٹی‘ کپڑا اور مکان ہی رہیگا‘ یہ ایک نعرہ نہیں تھا بلکہ ایک سوچ اور امید کا نعرہ تھا۔ عمران خان سے نظریاتی اختلافات ہیں‘ عمران خان کی گالم گلوچ کی سیاست نوجوانوں کےلئے خطرناک ہے۔