سٹی ٹریفک پولیس کاایکسیڈنٹ ویکٹم سپورٹ پروگرام جاری

24 نومبر 2017 (22:07)

چیف ٹریفک آفیسر لاہور کی زیر صدارت قربان لائن میں تمام سیکٹرز میں تعینات روڈ سیفٹی آفیسرز کارکردگی اور ورکنگ کا جائزہ لینے کیلئے اجلاس کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر ٹریفک وارڈنز کو موبائل فون کیمرہ کے ذریعے تصاویر اور ویڈیو بنانے بارے ٹریننگ بھی دی گئی۔ جس کا مقصد ٹریفک حادثہ کی صورت میں فوری جائے حادثہ کو عکس بند کرنا ہے ۔جس سے ڈرائیورز کی غلطی کا تعین ہوسکے۔ رائے اعجاز احمد نے روڈ سیفٹی آفیسر ز کو ہدایت کی کہ لاہور میں ہونے والے تمام مہلک اور غیر مہلک حادثات کے اندراج کو بھی یقینی بنائیں۔ حادثہ میں زخمی ہونے والے شہریوں کے ہمراہ ہسپتال جایا جائے اور ان کے لواحقین اور ورثاء کے آنے تک زخمیوں کے ساتھ رہا جائے،خون کی ضرورت پڑنے پر زخمیوں کیلئے خون کا انتظام بھی کیا جائے تاکہ بروقت مد د سے شہریوں کی جانوں کو محفوظ بنایا جا سکے۔مہلک حادثہ میں جانی نقصان کی صورت میں لواحقین کی اندارج مقدمہ میں بھی مدد کی جائے۔جاں بحق افراد کی نمازے جنازہ میں شرکت بھی کی جائے اوراس موقع پر حادثہ کی وجوہات اور ان کے تداراک بارے مفصل بریفنگ دی جائے۔رائے اعجاز احمد نے کہاکہ ٹریفک حادثہ کی صورت میں ڈرائیورز کے لائسنس کو فوری قبضہ میں لیا جائے اور مہلک حادثہ پر ان کے لائسنسوں کو کینسل کر دیا جائیگا،ڈرائیونگ لائسنس نہ ہونے کی صورت میں ان کیخلاف کارروائی کی جائے،حادثہ کی فوٹیج کیلئے قریبی عمارتوں پر لگے کیمروں سے بھی مدد لی جائے۔انہوں نے کہاکہ ہمیں انسانیت کیلئے آسانیاں پیدا کرنی چاہیں۔ شہریوں کے محفوظ سفر اور ٹریفک کی موثر روانی کیلئے شہریوں کو بھی اپنا مثبت کردار ادا کرنا چاہیے