بھارت : صحافی کے قتل کے خلاف اخبارات نے بطور احتجاج خالی جگہ چھوڑ دی

24 نومبر 2017 (15:19)

بھارت کی شمال مشرقی ریاست تری پورا میں مبینہ طور ایکسینئر فوجی اہلکار کے حکم پر صحافی کو قتل کرنے کے واقعے کے بعد متعدد علاقائی اخبارات نے بطور احتجاج اپنے ادارتی صفحات میں خالی جگہ چھوڑ دی۔بھارتی میڈیا کے مطابق تری پورا کے متعدث اخبارات نے سدیپ دتہ کے قتل کے خلاف جمعرات کو بطور احتجاج اپنے ادارتی صفحات کو خالی شائع کیا۔ریاست کی سیاسی جماعتوں نے بھی سدیپ دتہ کی موت کے خلاف احتجاج کے لیے ایک روزہ شٹر ڈان ہڑتال کی اپیل کی ہے جس کے بعد ریاست کے سکولز، کالجز اور دیگر دفاتر بند رہے۔صحافی سدیپ دتہ کو مبینہ طور پر گولی مارنے والے سپاہی کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔انڈیا میں گذشتہ ماہ بائیں بازو کی ایک سرکردہ صحافی گوری لنکیش کو جنوبی ریاست کرناٹک کے شہر بنگلور میں نا معلوم جوہات کی بنا پر گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔55 سالہ صحافی گوری لنکیش ہندو قوم پرست سیاست کی مخالف تھیں۔ گوری لنکیش ایک ہفت روزہ جریدے کی مدیر تھیں اور ان کا شمار نڈر صحافیوں میں ہوتا تھا۔