پی ٹی وی ایم ڈی کی تقرری‘ بلوچستان کیلئے فنڈز جاری کئے جائیں: سینیٹ فنکشنل کمیٹی

24 نومبر 2017

اسلام آباد(نوائے وقت نیوز) سینیٹ فنکشنل کمیٹی برائے کم ترقی یافتہ علاقہ جات نے حکومت سے سفارش کی ہے کہ پی ٹی وی کے ایم ڈی کی تقرری جلد ازجلدعمل میںلائی جائے تاکہ پی ٹی وی کے مسائل کو حل کیا جا سکے ۔ پی ٹی وی کا حال بھی پی آئی اے کی طرح کر دیا گیا ہے۔فنکشنل کمیٹی کا اجلاس چیئرمین کمٹی سینیٹر محمد عثمان خان کاکٹر کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہائوس میں منعقد ہوا ۔ فنکشنل کمیٹی کے اجلاس میں گزشتہ اجلاس میں دی گئی سفارشات پر عملدرآمد کا جائزہ لینے کے علاوہ اسلام آباد لوک ورثہ کی کارکردگی ، بجٹ اور لوک ورثہ کے صوبائی دارالحکومت میں دفاتر قائم کرنے اور پی ٹی وی کوئٹہ میں سٹاف ، فنکاروں اور گلوکاروں کے بقایا جات ادا کرنے کے معاملات کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا ۔کمیٹی کے آج کے اجلاس میں سینیٹرز ڈاکٹر جہانزیب جمال دینی ، خالدہ پروین ، نثار محمد ، اور میر کبیر احمد محمد شاہی کے علاوہ ڈائریکٹر جنرل آئی پی وزارت اطلاعات و نشریات ،ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ اور ڈائریکٹر فنانس پی ٹی وی بلوچستان نے شرکت کی ۔ ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ ڈاکٹر فوزیہ نے فنکشنل کمیٹی کو تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ کمیٹی کی سفارش کے باوجود 50 کروڑ بجٹ دینے کی بجائے اضافی صرف30 لاکھ دیئے گئے ۔ لوک ورثہ کا کل بجٹ 8 لاکھ تھا ۔صوبوں کے دارالحکومتوں میں کلچرل سینٹر اور برانچیں کھولنے کے حوالے سے کمیٹی کو بتایا گیا کہ فنڈز کافی نہیں ہیں جس کی وجہ سے مسائل کا سامنا ہے البتہ ثقافت ، رسم رواج اور زبانوں کے پہچان اور فروغ کیلئے مختلف اقدامات اٹھائے گئے ہیں ، پسماندہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے فنکاروں ،گلوکاروں کے فن کے فروغ کیلئے مختلف اقدامات بھی اٹھائے ہیں ،مختلف ثقافتوں کو محفوظ کرنے کیلئے ڈی وی ڈیز تیار کی گئیں ہیں،چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ دنیا بھر میں پاکستانی ثقافت کو فروغ دینے کیلئے ایئر پورٹ پر سول ایوی ایشن لوک ورثہ کو کیبن فراہم کرے تاکہ بیرون ممالک جانے والے ڈی وی ڈیز خرید سکیں ۔کمیٹی نے کلاش ثقافت کیلئے چترال اور تھر کی ثقافت کو اجاگر کرنے کیلئے سندھ میں پروگرام منعقد کرنے کی سفارش کر دی ۔ سینیٹر نثار محمد نے کہا کہ فاٹا میں برقی قبیلہ بتدریج ختم ہورہا ہے ۔اس کے تحفظ کیلئے اقدامات کیے جائیں ۔کمیٹی کو بتایاگیاکہ میوزیکل اکیڈمیز کے قیام کیلئے چین کی ایک کمپنی نے دلچسپی ظاہر کی ہے ۔ وزارت اس حوالے سے اقدامات اٹھائے ۔کمیٹی کو بتایا گیا کہ مقامی تہواروں کو اجاگر کرنے کیلئے لوک ورثہ میں پروگرامز منعقد کیے جاتے ہیں ۔ بسنت تہوار کیلئے بسنت کے حوالے سے میوزیکل پروگرام منعقد کرائے گئے ہیں ۔ کمیٹی کو بتایاگیاکہ موجودہ بجٹ کو 90 فیصد تنخواہوں میں خرچ ہو جاتا ہے ۔ پی ٹی وی کوئٹہ سینٹر میں ملازمین ، فنکاروں اور گلوکاروں کے بقایا جات کی ادائیگی کیلئے معاملات کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا ۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ بلوچستان کو نظر انداز کرنا ختم کیاجائے ۔ پی ٹی وی بولان کو بند کرنے کی اگر کوئی سوچ بھی ہے تو یہ کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ کمیٹی نے متفقہ طور پر وزارت اطلاعات و نشریات و قومی ورثہ کو ہدایت کی کہ 20 دسمبر تک پی ٹی وی بلوچستان کے فنڈز کااجراء کیا جائے تاکہ نہ صرف تمام ادائیگیاں کی جائیں بلکہ دفاتر اور کیمروں کی صورتحال بھی بہتر کی جاسکے ۔ فنکشنل کمیٹی نے سیکرٹری اطلاعات ونشریات کی کمیٹی اجلاس میں عدم شرکت پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ بھی کیا ۔