عدالتی نظام کی اپ گریڈیشن کا عمل تیزی سے جاری ہے‘ جسٹس سید منصور علی شاہ

24 نومبر 2017

راولپنڈی(اپنے سٹاف رپورٹر سے) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے برطانیہ کا دورہ کرنے والے دیگر ججوں کے ہمراہ برطانیہ کے مختلف علاقوں میںواقع عدالتوں کرائون پراسیکویشن سروس اور اے ڈی سینٹرز کا دورہ کیا اس موقع پر انہوں نے عدالتی مقدمات کے جلد تصفیہ کے لیے مصالتی نظام کا جائزہ لیا اس مو قع پر انھیں برطانوی عدالتی طریقہ کا ر اور مختلف متعلقہ اداروں میں عدالتی مقدمات کے حوالے سے قوانین اورا نتظامی شعبوں کی کارکردگی کے بارے میں بریفنگ دی گئی برطانیہ کا دورہ کرنے والے عدالتی وفد میںکے اراکین جسٹس مامون راشد شیخ ، جسٹس محمد فرخ عرفان خان، جسٹس علی اکبر قریشی ، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راولپنڈی سہیل ناصر ، محمد اکمل خان، ڈائر یکٹر جنرل ، ڈائر یکٹوریٹ آف ڈسٹر کٹ جوڈیشری مسزعائشہ خالد، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اور سیشن جج ،سینئرانسٹریکٹر پنجاب جوڈیشری اکیڈیمی محسن ممتاز ، سول جج،ریسرچ آفیسر، لاہور ہائیکورٹ اور ایڈیشنل رجسٹرارآئی ٹی لاہور ہائیکورٹ جمال احمد شامل ہیںجسٹس سید منصور علی شاہ نے اس موقع پر کہا کہ پنجاب میں کیس مینجمنٹ اور اے ڈی آر سنٹرز کے حوالے سے پیش رفت اور کامیاب نتائج سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کے عدالتی نظام کو اپ گریڈ کیاجا رہا ہے اس اس سلسلے میں ججز کے ساتھ ساتھ وکلاء اور دیگر معاون اداروں کو بھی ممکنہ سہولیات فراہم کی جارہی ہیں تاکہ عدالتوں میں زیر التوا مقدمات کی سماعت میں تیزی لائی جاسکے ان اقدمات کے نتیجے میں ہائیکورٹ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس اور سب ڈوثیزن کی سطح پر قائم عدالتوں میںمقدمات کے فیصلے بلاتاخیر ہورہے ہیں اور فوری انصاف کی فراہمی کو یقینی بنایا جارہاہے ۔جسٹس سید منصور علی شاہ نے کہا کہ ہمار مطمع نظر یہ ہے کہ عام آدمی تک انصاف کی رسائی ممکن بنائی جا ئے اور اس سلسلے میں ہر سطع پر خصوصی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔