ہائی ایفی شینسی ایریگیشن سسٹم سے پیداوار میں 20 تا 100فیصد اضافہ ممکن ہے

24 نومبر 2017

راولپنڈی (نیوزرپورٹر) ہائی ایفی شنسی ایریگیشن سسٹم کے تحت پیداواری اخراجات میں30 تا 40 فیصد بچت اورپیداوار میں100-20 فیصد تک اضافہ ممکن ہوتا ہے۔ یہ پیداواری اضافہ دیہی معیشت میں ترقی اور کاشتکاروں کی آمدن میں اضافہ کا باعث بنتا ہے۔محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان کے مطابق پنجاب بھر کے تمام اضلاع میں ڈرپ و سپرنکلر ایریگیشن سسٹم کی سکیم کو متعارف کرایا گیا ہے تاکہ کاشتکار پانی کی کمی کو دور کرنے کے علاوہ دوسرے زرعی مداخل سے بھی بہتر طور پر استفادہ حاصل کر سکیں۔ فصلات کی فی ایکڑ پیداوار میں اضافے ، پانی، کھاد اور بجلی کے مسائل پر قابو پانے کا واحد حل ڈرپ اریگیشن ٹیکنالوجی ہے ۔ ایسی زمینیں جو غیر ہموار ، پوٹھوہاری یا ریگستانی ہوں وہاں ڈرپ نظام آبپاشی ایک بہترین نظام آبپاشی ہے کیونکہ اس سے پودوں کی نشوونما بہتر اور بروقت انداز میں ہوتی ہے جو آبپاشی کے پرانے طریقوں سے ممکن نہیں۔ ڈرپ اور سپرنکلر نظام آبپاشی اپنی بہتر کارکردگی کی وجہ سے پانی کی کمی سے نمٹنے کا بہترین طریقہ ہے جو کہ کم خرچ کے علاوہ قابل عمل بھی ہے۔ اعلیٰ استعداد کار کے حامل اس جدید نظام آبپاشی کی بنیادی خصوصیات یہ ہیں کہ اس کے ذریعے پورے کھیت کو سیراب کرنے اور خوراک دینے کی بجائے تمام پیداواری اجزاء (پانی، کھاد وغیرہ) کو پودوں تک براہ راست پہنچایا جاتا ہے جس سے پانی اور خوراکی اجزاء کی بچت کے ساتھ ساتھ پیداوار میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوتا ہے۔