ننکانہ: سکول و کالج کی چھٹی کے وقت آدھا گھنٹہ رش میں پھنسا رہنے سے معمر شخص جاں بحق

24 نومبر 2017

ننکانہ صاحب (نامہ نگار خصوصی) ہسپتال روڈ ننکانہ پر موجودہ خواتین کالج و سکول کے اوقات میں رش سے آدھا گھنٹہ ٹریفک جام رہنے سے مریض جاں بحق، ڈی پی او ننکانہ سے ٹریفک پولیس کی تعیناتی اور سکول کی پارکنگ ہاکی اسٹیڈیم میں منتقل کرنے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز فیصل آباد سے ننکانہ آنے والے مہمان ابو بکر کے سسر کو دل کا دورہ پڑا جسے ڈی ایچ کیو ہسپتال ننکانہ لے جانے کیلئے جب وہ ایم سی گرلز ہائی سکول بالمقابل آفیسر کلب پہنچے تو طالبات کو چھٹی کی وجہ سے ویگنوں، رکشوں وموٹر سائیکلوںکے باعث ٹریفک جام تھی وہاں سے گزرنے میں آدھا گھنٹہ ضائع ہوگیا جس سے پچاس سالہ محمد ابراہیم جاں بحق ہوگیا یاد رہے کہ ہسپتال روڈ پر موجودہ خواتین کالج اور گرلز سکول میں چھٹی کے اوقات رش کے باعث آدھا آدھا گھنٹہ ٹریفک بند رہنا معمول بن چکا ہے جس سے ایمبولینس و چیک اپ کے لیے ہسپتال جانے والے مریضوں و دیگر راہگیروں کو بے پناہ مشکلات کا سامناکرنا پڑتا ہے۔ اسی روڈ پر ایکسین لیسکو، آفیسر کلب، ہاکی سٹیڈیم، جمنیزیم و دیگر سرکاری دفاتر ہونے کے باعث بھی کافی رش رہتاہے اور آئے روز لوڈ شیڈنگ و اوور بلنگ سے پریشان شہری قناتیں لگا کر احتجاج کررہے ہوتے ہیں صدر ڈسٹرکٹ بار ننکانہ رائے محمد اکرم بھٹی جنرل سیکرٹری ٹرانسپورٹ حاجی اظہر اقبال، تاجر رہنما شیخ ادریس اینڈ کمپنی، سماجی و مذہبی رہنما حاجی حمید رحمانی و دیگر شہری تنظیموں نے ڈی پی او ننکانہ صاحبزادہ بلال عمر سے اپیل کی کہ طالبات کو لانے اور لے جانے والے رکشوں، ویگنوں و موٹر سائیکلوں کو قریبی ہاکی اسٹیڈیم میں منتقل کیا جائے۔