منشیات کے مقدمہ میں جرم ثابت ہونے پر ملزم کو عمر قید‘2 لاکھ جرمانہ

24 نومبر 2017

راولپنڈی(نیوزرپورٹر)ضلعی عدالتوں نے فراڈ اور منشیات کیسزمیں1ملزم کو عمر قید ،2 کو بری کرتے ہوئے2 ملزمان کو پروبیشن کی سزا سنا دی جبکہ 1 ملزم کی درخواست ضمانت خارج اور3کی منظور کرلی گئی ۔ جمعرات کو ایڈیشنل سیشن جج راولپنڈی حسنین اظہر شاہ نے تھانہ پیرودھائی اور تھانہ صادق آباد کے منشیات مقدمات میں ساجد اور انعام الرحمن کو ایک ،ایک سال پروبیشن کی سزا سنادی ، تھانہ گنج منڈی کے منشیات کیس میں ملزم ذوار کی درخواست ضمانت خارج کر دی گئی جبکہ سپیشل جج سینٹرل راولپنڈی محمد نعیم ارشد نے پوسٹ آفس میں رقم کی خورد برد کے ملزم محمد اشفاق کو جرم ثابت نہ ہونے پر بری کر دیا ملزم کے خلاف ایف آئی اے نے مقدمہ درج کیا تھا۔ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راولپنڈی شبریز اختر نے مختلف مقدمات میں ایک ملزم کو بری کردیا جبکہ ایک ملزم کی درخواست ضمانت منظور کر لی ۔ عدالت نے تھانہ مورگاہ کے لڑکی سے درندگی کے مقدمہ میں ملزم نواب خان کو بری کر دیا جبکہ تھانہ ریس کورس کے اغوا کیس میں ملزم تنویر کی درخواست ضمانت ایک لاکھ کے مچلکہ پرمنظور کر لی ۔ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راولپنڈی طاہر عباس سپرا نے قتل کے دو ملزمان کی ضمانت ایک ،ایک لاکھ کے مچلکوں پر منظور کر لی ۔ملزمان زبی اللہ وغیرہ کے خلاف تھانہ پیرودھائی پولیس نے الگ الگ مقدمات درج کئے تھے جس میں ان پر قتل کے الزام عائد کئے گئے ۔ انسداد منشیات کی خصوصی عدالت کے جج راجہ پرویز اختر نے منشیات کیس میں1 ملزم کو جرم ثابت ہونے پر عمر قید اور 2لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنا دی عدم ادائیگی جرمانہ ملزم کو مزید2 سال قید بھگتنا ہوگی۔ملزم پرویز خان کے خلاف اینٹی نارکوٹکس فورس نے20 کلو چرس گاڑی کے ذریعے خیبر پختونخواہ سے پنجاب سمگل کرنے کی کوشش کا الزام عائد کرتے ہوئے مقدمہ درج کیا تھا۔