قصور اراضی خوردبرد کیس: علم ہے پٹواری بغیر رشوت کام نہیں کرتے: جج اینٹی کرپشن

24 نومبر 2017

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) لاہور کی انٹی کرپشن کورٹ میںقصور میں اربوں روپے کی1205کنال سرکاری اراضی خوردبرد کرنے کے کیس کی سماعت کی گئی۔ عدالت نے ریمارکس دئیے علم میں ہے پٹواری رشوت لئے بغیر کام نہیں کرتے، سرکاری زمین الاٹ کی گئی یا خوردبرد، عدالت معاملے کی تہہ تک جائے گی۔ اینٹی کرپشن عدالت لاہور کے سپیشل جج جوادالحسن نے کیس کی سماعت کی۔ سرکاری وکیل رانا نواز نے عدالت کو بتایا سابق اے ڈی سی قصور عامر عقیق نے دو تحصیلداروں، متعلقہ پٹواریوں اور دیگر ملزموں کے ساتھ ملی بھگت کر کے اربوں روپے کی 1205 کنال سرکاری اراضی اپنے اور رشتہ داروں کے نام کر لی، ملزم سابق اے ڈی سی جی قصور عامر عتیق کے وکیل نے عدالت کو بتایا ملزم سینئر اور ذمہ دار افسرہے۔ محض سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے کیونکہ ملزم شیخوپورہ کے منور منج خاندان کا داماد ہے۔ تفتیشی افسر کی جانب سے مطلوبہ ریکارڈ پیش نہ کرنے اور درست تفتیش نہ کرنے پر عدالت نے سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا عدالت جائزہ لے گی زمین سرکاری تھی بھی یا نہیں۔ عدالت نے مزید سماعت سات دسمبر تک ملتوی کردی۔