حکومت مطالبات پورے کرنے میں ناکام، عدالتی کارروائی کرینگے: اشرف آصف جلالی

24 نومبر 2017

لاہور (خصوصی نامہ نگار)تحریک لبیک یارسول اللہﷺ کے زیر اہتمام ایوان اقبال لاہور میں عقیدہ ختم نبوت کی قطعیت،اہمیت اور افادیت کے موضوع پر نہایت علمی و تحقیقی ”لانبی بعدی کانفرنس“ کا انعقاد کیا گیا۔کانفرنس کی صدارت تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ کے مرکزی رہنما اور آستانہ عالیہ شرقپور شریف کے سجادہ نشین حضرت میاں ولید احمد شرقپوری نے کی ۔کانفرنس کا اعلامیہ پیش کرتے ہوئے تحریک لبیک یا رسول اللہ ﷺ کے مرکزی چئیرمین ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے کہا کہ تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ کے 24 اکتوبر سے 3 نومبر تک کاروان ِختم نبوت اور دھرنے کے نتیجے میں منظور شدہ چھ مطالبات پرعملدرآمد کرانے اور اپنے وعدے پورے کرنے میں حکومت بری طرح ناکام رہی ہے پوری قوم کا مطالبہ ہے راجہ ظفر الحق رپورٹ منظر عام پر لائی جائے ۔ اس سلسلہ میں ہم عدالتی کاروائی بھی کریں گے۔ عقیدہ ختم نبوت کے مجرموں کو سزا دلوائے بغیر ہم چین سے نہیں بیٹھیں گے۔حکومت نے اسلامیان ِپاکستان کے جذبات کو ٹھنڈا کرنے کے لیے گمراہ کن اشتہاری مہم شروع کر رکھی ہے۔

جس کا مقصد حلف نامہ ختم نبوت کے مجرموں کو تحفظ دینا اور عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کی جدوجہد کرنے والوں پر الزام تراشی ہے۔ راجہ ظفر الحق نے اپنے ایک خطاب میں تبدیلی بھی تسلیم کی اور اسے قادیانیوں کی سازش کہا اس مسئلے کا حل یہی ہے کہ حکومت اس موضوع پر کسی بھی چینل پر لائیو مناظرہ کرائے۔ توہین رسالت کا جھوٹا الزام لگانے والے کی حوصلہ شکنی ضرور ہونی چایئے اوراسے سزا بھی ضرورملنی چاہئے مگراس کی سزا ہرگز قتل نہیں ہے ۔