ایس ایم ای فنانس روڈ میپ وسیع تر مالیاتی شمولیت کیلئے رہنما اصول کا کام کریگا

24 نومبر 2017

اسلام آباد ( عاطف یو سف زئی ) شیمروک کانفرنسز انٹرنیشنل کے زیر اہتمام 11 ویں پاکستان مائیکرو فنانس اینڈ ایس ایم ای فورم 2017ء میں سٹیٹ بینک آف پاکستان اور تمام شراکت داروں پر زور دیا گیا کہ وہ پائیدار اور مجموعی اقتصادی نمو کے لئے ایم ایس ایم ای فنانس کے فروغ میں فعال کردار ادا کریں۔ فورم کا انعقاد جمعرات کو رمادا ہوٹل اسلام آباد میں ہوا، اس کانفرنس کا عنوان ’’عوام کو بااختیار بنانے کے لئے کاروبار و مالیاتی شمولیت کا فروغ‘‘ تھا۔ ڈویلپمنٹ فنانس گروپ کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر سید سمر حسنین نے کہا کہ ایس ایم ای فنانس روڈ میپ وسیع تر مالیاتی شمولیت کے لئے رہنما اصول اور فریم ورک کا کام کرے گا جس سے ایس ایم ایز بالخصوص چھوٹے پیمانے کے کاروباری ادارے بااختیار ہوں گے۔ پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک (پی ایم این) کے چیئرمین ندیم حسین نے کہا کہ مائیکرو فنانس کا کام کرنے والوں کو اگلی سطح پر جانے کے لئے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اختیار کرنی چاہئے۔ اس سے قبل شیمروک گروپ کے چیئرمین مینن روڈریگوس نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا، فورم کے انعقاد میں براک پاکستان، خوشحالی بینک لمیٹڈ اور FINCA مائیکرو فنانس بینک نے تعاون فراہم کیا۔ اس سلسلے میں پی ایم این، سمیڈا اور یونین آف سمال اینڈ میڈیم انٹر پرائزز (یو این آئی ایس اے ایم ای) کے علاوہ مختلف ترقیاتی مالیاتی اداروں کا تعاون بھی حاصل تھا۔ نمایاں مقررین میں ڈائریکٹر ایس ای سی پی ناصر عسکر، FINCA مائیکرو فنانس بینک کے سی او او شاہد قاضی، انسٹیٹیوٹ آف رورل مینجمنٹ کے سی ای او رومی حیات، مائیکرو انشور کے گروپ بزنس ڈائریکٹر ریحان بٹ، سمیڈا کے صوبائی سربراہ و جی ایم راجہ حسین جاوید اور کیف کام اینڈ جینڈر کنسلٹنٹ کی بانی ڈاکٹر رخشندہ پروین شامل تھے۔