مثبت حکومتی اقدامات، گزشتہ ماہ ملکی برآمدات میں 7.89 فیصد اضافہ

24 نومبر 2017

فیصل آباد(آئی این پی)پاکستان ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین شائق جاویدنے کہا ہے کہ مثبت حکومتی اقدامات کے باعث گذشتہ ماہ ملکی برآمدات میں 7.89 فیصد اضافہ برآمدی صنعتوں کو خطے کے مساوی نرخوں پر ذرائع توانائی کی فراہمی، ری فنڈ کلیمز کی فوری ادائیگی اور ایکسپورٹ پیکج پر مکمل عملدرآمد سے برآمدی ترقی کی شرح کومزید بہتر کیا جا سکتا ہے اکتوبر میں ٹیکسٹائل برآمدات میں 7.12 جبکہ جولائی تا اکتوبر7.72 فیصد اضافہ ہوا پنجاب کی انڈسٹری 2015سے بنیادی پیداواری عنصر گیس کی فراہمی پر دیگر صوبوں کی نسبت 40 فیصد زیادہ آر ایل این جی ٹیرف ادا کر رہی ہے۔جبکہ 10 فیصد UFG اور 100 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو GIDC کی مد میں ادا کئے جا رہے ہیں۔ ان سرچارجز کے باعث آر ایل این جی کا ریٹ 11 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو تک پہنچ چکا ہے اس کے مقابلہ میں بنگلہ دیش میں صنعتوں کیلئے گیس کا ریٹ 3 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو، ویت نام میں 4.2 ڈالر اور بھارت میں 4.5 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو ہے اسی طرح پنجاب کے علاوہ دیگر صوبوں میں صنعتی مقاصد کیلئے سسٹم گیس کا ریٹ 7.6 ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو ہے گیس قیمت میں اتنے زیادہ فرق کے ساتھ دیگر ممالک سے مقابلہ کیسے ممکن ہے اسی طرح3.10 روپے فی کلوواٹ آور ٹیرف ریشنلائزیشن سرچارج اور 0.43 روپے فی کلوواٹ آور فنانس سرچارجز کے باعث پاکستان میں بجلی کی قیمت خطے کے دیگر ممالک کی نسبت 50 فیصد زائد ہے بلند پیداواری لاگت کو سب سے بڑا مسئلہ ہے اس سے عالمی مارکیٹ میں دیگر ممالک سے مسابقت بری طرح سے متاثر ہو رہی ہے پیداواری لاگت میں اضافے کی سب سے بڑی وجہ توانائی کے زیادہ نرخ ہیں۔
برآمدات